2020ء تک خود پارک ہونے والی کاریں آ جائیں گی

819

گاڑیاں بنانے والے ادارے اپنی سیلف-پارکنگ کاروں کے تجربات کے بڑے شوقین ہیں لیکن فوکس ویگن اسے حقیقت کا روپ دینا چاہتا ہے۔ یہ دیکھنا حیران کن ہوگا کہ اس گروپ کی گاڑیاں جیسا کہ آؤڈی، بینٹلی، پروشا اور لیمبورگھینی 2020ء سے خودکار پارکنگ شروع کردیں گی۔ ابتدائی طور پر یہ نظام صرف "منتخب” پارکنگ ایریاز میں دستیاب ہوگا لیکن یہ تصویری رہنما نشانات پر بھروسہ کرتا ہے یعنی عملی طور پر کسی بھی گیراج میں کارآمد بنایا جا سکتا ہے۔

یہ نظام دو مرحلوں میں آئے گا، پہلے خودکار پارکنگ کی سہولت رکھنے والی گاڑیوں کو ایک ایک الگ علاقے میں رہنمائی دی جائے گی تاکہ انہیں انسانی ڈرائیورز کی غیر یقینی حرکات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ بعد میں فوکس ویگن "مکسڈ” پارکنگ کا عہد کرتا ہے کہ جہاں خودکار اور عام گاڑیاں ایک ہی علاقے میں پارک ہو سکیں گی۔

ڈرائیورلیس پارکنگ رکھنے والی گاڑیوں میں اردگرد کے ماحول کو سمجھنے کا متحرک نظام نصب کیا جائے گا جس میں کیمرے، ریڈار اور الٹرا ساؤنڈ شامل ہوں گے۔ اس لیے حیرانگی کی بات نہیں ہوگی اگر یہ مہنگی گاڑیوں میں نصب ہو کیونکہ اس کی لاگت بہت زیادہ ہوگی۔

ہو سکتا ہے کہ مکمل خود مختار کاریں آنے میں مزید چند سال لگیں، لیکن پارکنگ کے لیے اس کی ضرورت نہیں ہے۔ کیونکہ یہ گاڑی سڑک پر نہيں ہوتی اور اسے درپیش چیلنجز بھی کم ہوتے ہیں۔ بس تصور کیجیے کہ پارکنگ ایریا میں کئی منٹوں تک خوار ہونے کے بجائے آپ بس اپنی گاڑی کو داخلی دروازے پر چھوڑ جائیں اور باقی وہ خود ہی جگہ ڈھونڈ کر پارک ہو جائے!