اگلے اینڈرائیڈ ورژن میں کیمرا اور مائیک ہائی جیک کرنا مشکل ہوگا

1,379

کہیں کوئی آپ کی جاسوسی تو نہیں کر رہا؟ کہیں کوئی آپ کا کیمرا تو ہیک نہیں کر رہا کہ آپ کو معلوم ہی نہ ہو اور کیمرے کے ذریعے ریکارڈنگ کی جا رہی ہو؟ گو کہ کوئی اتنا فارغ نہیں لیکن خطرہ تو بہرحال موجود ہے اور یہ ممکن بھی ہے۔ اس لیے گوگل نے اس مسئلے سے نمٹنے کی ٹھان لی ہے۔

حال ہی میں دریافت ہونے والے ایک کوڈ سے معلوم ہوا ہے کہ اینڈرائیڈ کے اگلے ورژن میں idle ہو جانے والی ایپس کوکیمرا اور مائیکروفون دونوں کے استعمال سے روک دیا جائے گا۔ یعنی اگر ایک inactive پروگرام کیمرا استعمال کرنے کی کوشش کرے گا تو اینڈرائیڈ اسے بند کردے گا اور صارف کو ایرر بھی دکھائے گا۔ مائیکروفون کا معاملہ کچھ مختلف ہے کہ یہ ریکارڈنگ کی اجازت تو دے گا لیکن جب تک ایپ active ہو تب تک۔ یوں مالویئر بیک گراؤنڈ میں کسی فون سے ریکارڈنگ نہیں کر سکیں گے جبکہ قانونی ایپس کو کوئی مسئلہ نہیں ہوگا۔

گوگل نے ابھی تک اپنے اگلے ورژن 9.0 کا نام تک نہیں رکھا، اس لیے ہو سکتا ہے کہ اس کی تصدیق میں کچھ وقت لگے لیکن یہ بات صاف ظاہر ہے کہ اگلے ورژن میں وہ پرائیویسی کو محفوظ کرنے کے لیے اینڈرائیڈ کو مضبوط تر بنائے گا۔

اس وقت ایسی ایپس کی بھرمار ہے جو آپ کے مائیکروفون اور کیمرے سے ریکارڈنگ کی صلاحیت رکھتی ہیں، وہ بھی آپ کے علم میں لائے بغیر۔ بلاشبہ آئندہ بھی ایسا ناممکن نہیں ہوگا، لیکن ہیکرز کے لیے کچھ مشکل ضرور ہو جائے گا۔