ایک اور ٹیسلا کار حادثے کا شکار، ڈرائیور مارا گیا

1,001

امریکا میں ایک ٹیسلا کار کو پیش آنے والے حادثے میں ایک شخص مارا گیا ہے۔

کیلیفورنیا ہائی وے پیٹرول کے ترجمان ڈینیل جوکووٹز کے مطابق ٹیسلا ماڈل ایس کار سڑک سے اتر کر باڑھ سے ٹکرائی اور اس کے بعد ایک تالاب میں جا گری۔ بعد میں امدادی کارروائیاں کرنے والوں نے گاڑی کو باہر نکالا، جس میں سے ڈرائیور کی لاش بھی برآمد ہوئی۔ جس کی شناخت 34 سالہ کیتھ لیونگ کے طور پر ہوئی ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ابھی یہ کہنا قبل از وقت ہے کہ گاڑی حادثے کے وقت آٹوپائلٹ پر تھی یا نہیں؟ یا کہیں ڈرائیونگ زائد رفتاری کر رہا تھا یا نشے کے زیر اثر تو نہیں تھا؟

جو تصاویر سامنے آئی ہیں ان میں دیکھا جا سکتا ہے کہ گاڑی کا پچھلا حصہ مکمل طور پر تباہ ہو گیا ہے اور آگے بھی ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے اور تمام شیشے بھی ٹوٹے ہوئے ہیں۔

یہ حادثہ سان ریمون اور ڈینول کے شہروں کے قریب ہوا تھا۔ ایک شخص نے پولیس کو مطلع کیا کہ اسے کسی چیز کے ٹکرانے کی زوردار آواز آئی ہے۔گاڑی اتنی رفتار میں تو ضرور تھی کہ سڑک سے اتر کر جنگلا دوڑتے ہوئے آگے تالاب میں جا گری۔

اس وقت تحقیقات کی جا رہی ہیں کہ کہیں گاڑی اس وقت آٹوپائلٹ پر تو نہیں تھی۔ اس خودکار موڈ کی وجہ سے حالیہ چند دنوں میں کئی حادثات ہوئے ہیں اور یوں مستقبل کی پیشرفت کو سخت نقصان پہنچ رہا ہے۔ مارچ کے مہینے میں ٹیسلا ماڈل ایکس کا ایک ڈرائیور اسی ریاست کیلیفورنیا میں مارا گیا تھا جب اس کی گاڑی پوری رفتار کے ساتھ ایک رکاوٹ سے جا ٹکرائی تھی۔ اس وقت گاڑی آٹوپائلٹ موڈ میں تھی۔ یہی نہیں بلکہ ریاست یوٹاہ میں رواں ماہ پیش آنے والے حادثے میں بھی گاڑی آٹو پائلٹ پر چل رہی تھیں۔ پھر یہی ماڈل ایس گاڑی فلوریڈا میں ایک پوری رفتار کے ساتھ ایک دیوار سے ٹکرائی جس کے نتیجے میں گاڑی میں آگ لگ گئی اور اندر موجود 18 سال کے دو نوجوان مارے گئے۔ معاملے کی تحقیقات ابھی جاری ہیں۔

آٹوپائلٹ وہ معروف نیم خودکار نظام ہے جو کیمروں اور دیگر سینسرز کا استعمال کرتے ہوئے قریب موجود گاڑیوں کی نشاندہی بھی کرتا ہے اور گاڑی کو خود چلنے کے قابل بناتا ہے۔