ایک گھنٹے میں بٹ کوائن قیمتوں میں 14 فی صد اضافہ

1,547

مارکیٹ رپورٹس کے مطابق جمعہ کی صبح صرف ایک گھنٹے میں بٹ کوائن کی قیمت 14 فی صد بڑھ کر 8000 ڈالر تک جا پہنچی۔ جو کہ گزشتہ دو ماہ میں سب سے زیادہ اضافہ ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ بٹ کوائن کی قیمتوں میں یہ اچانک اضافہ امریکہ میں ٹیکس سیزن کے اختتام کی وجہ سے ہوا ہے۔ کیونکہ امریکی سرمایہ کاروں نے بڑے پیمانے پر ٹیکس ادائیگیوں کے بعد بٹ کوائن میں سرمایہ کاری کی ہے جس کی وجہ سے یہ ریکارڈ اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

گو کہ اس اضافے کے باوجود بٹ کوائن کی حالیہ قیمت اس کی ریکارڈ قیمت کے نصف سے بھی کم ہے جو کہ گزشتہ سال دسمبر میں 19843 ڈالر فی بٹ کوائن کی بلند ترین سطح تھی۔ تاہم بٹ کوائن کی قیمتوں میں تنزلی کی پیش گوئیوں اور مختلف حکومتوں کی جانب سے کرپٹوکرنسی کے خلاف سخت ترین اقدامات کے باوجود یہ اضافہ حیران کن ہے۔

البتہ کرپٹو کرنسیز کی قیمتوں میں پائے جانے والے بے انتہا تغیر کی وجہ سے ابھی بھی یہ کہنا قبل از وقت ہے کہ بٹ کوائن دوبارہ اپنا کھویا مقام واپس حاصل کر پائے گی یا مالی ماہرین کی پیش گوئی کے مطابق مسلسل تنزلی کا شکار رہے گی۔