اینڈرائیڈ کا ایک فیچر جو آئی فون کو چوری کرنا چاہیے

پہلے ہواوی کا پی20 پرو آیا، جو آئی فون کی نقل لگتا ہے، پھر اس کا پورشا ایڈیشن آیا، بہت ہی بھاری قیمت اور بہت کم خصوصیات کے ساتھ۔ پھر ہواوی کے مقابل ادارے اوپو نے فائنڈ ایکس کا اجراء کیا جو آئی فون کی نقل نہیں۔ اسے اینڈرائیڈ کا فلیگ شپ فون کہا جا سکتا ہے کہ جس کی قیمت ایک ہزار ڈالرز سے بھی زیادہ ہے۔ لیکن اب اوپو فائنڈ ایکس کے لیمبورگھینی ورژن کی تیاری ہے – ایک اور غیر ضروری ڈیوائس جو اتنی ہی مہنگی ہے جتنی کہ ہواوی کا پورشا ایڈیشن۔ لیکن فائنڈ ایکس کے لیمبو ایڈیشن میں ایک خصوصیت ایسی ہے جو ایپل کو نقل کرنی چاہیے۔

نہیں، نہیں، ہم 512 جی بی کی اسٹوریج کی بات نہیں کر رہے اور نہ ہی چھپے ہوئے کیمرا سسٹم نے ہمیں متاثر کیا ہے اور نہ ہی ہم آئی فون سے کسی بی ایم ڈبلیو ورژن کی بے وقوفانہ امید رکھتے ہیں، یہ حرکتیں چینی فون سازوں کے لیے ہی چھوڑ دینی چاہئیں۔

دراصل فائنڈ ایکس کے لیمبورگھینی ایڈیشن میں ایک خصوصیت ایسی ہے جو بہت عمدہ ہے۔ اوپو کہتا ہے کہ فون کی بیٹری صرف 35 منٹ میں صفر سے 100 فیصد تک چارج ہو جاتی ہے۔ اوپو کی سپر VOOC فلیش فاسٹ بیٹری چارجنگ ٹیکنالوجی کی بدولت اس تصور کو عملی صورت میں دیکھا جارہا ہے۔ یہ ایسی خصوصیت ہے جو ہر فرد آئی فون میں دیکھنا چاہتا ہے۔

بیٹری لائف آج بھی اسمارٹ فونز کا سب سے پریشان کن پہلو ہے۔ کوئی بھی اسمارٹ فون، بالخصوص مہنگے ماڈلز کی بیٹری کو تو دن بھر چلنا چاہیے لیکن اس معاملے میں ہمیں اب تک کوئی انقلابی کامیابی دیکھنے کو نہیں ملی۔ اس صورت حال میں VOOC جیسی فاسٹ چارجنگ ٹیکنالوجی کم از کم بیٹری چارج کرنے کے جھنجھٹ کو تو کم کر سکتی ہے۔

لیکن اگر کوئی فون آدھے گھنٹے سے کچھ زیادہ وقت میں مکمل چارج ہو جائے، تو اس کے لیے آپ کو یقیناً خصوصی چارجر کی ضرورت ہوگی اور یہ بھی نہیں معلوم کہ اتنی فاسٹ چارجنگ ٹیکنالوجی مستقبل میں بیٹری کے ساتھ کیا کرے گی؟ پھر بھی یہ ایک زبردست چیز ہے۔

ہاں! اگر آپ فائنڈ ایکس کا لیمبو ایڈیشن خریدنا چاہتے ہیں تو یاد رکھیں کہ اس کی قیمت ہے تقریباً 2 ہزار ڈالرز یعنی دو آئی فون ٹین کی قیمت کے برابر۔ اگر ایپل نے اپنے آئی فون کی چارجنگ کو اتنا تیز کیا تو امید ہے کہ وہ اس کی قیمت 2 ہزار ڈالرز نہیں کرے گا۔

آئی فوناوپو فائنڈ Xہواوی پی20 پرو