ایپل پر مقدمہ ہوگیا، ہارا تو اربوں ڈالرز دینا پڑیں گے

کئی ارب ڈالر کی ایک پیچیدہ قانونی جنگ ایپل اور چپ بنانے والے ادارے کویلکوم کے درمیان جلد ہی عدالتوں کا رخ کرے گی۔ چھ ممالک میں 50 سے زیادہ مقدمات درج کیے گئے ہیں لیکن امریکا، چین اور جرمنی میں آئندہ سماعتوں کا نتیجہ دونوں ٹیکنالوجی کمپنیوں کو تصفیے پر مجبور کرے گا۔

اصل وجہ تنازع ہے کہ آیا ایپل ٹیکنالوجی لائسنسنگ میں کئی ارب ڈالرز کی ادائیگی سے انکار کرکے کویلکوم کے پیٹنٹس کی خلاف ورزی کر رہا ہے یا نہیں۔ چپ میکر کا کہنا ہے کہ ایپل فیس ادا نہ کرکے اس کی پراپرٹی چوری کر رہا ہے جبکہ ایپل کا کہنا ہے کہ کویلکوم بنیادی اسمارٹ فون ٹیکنالوجی کے لیے زیادہ فیس طے کرنے کے لیے اپنے پیٹنٹس کا استعمال کرتا ہے۔

بلوم برگ کے مطابق اس قانونی تنازع کا سبب بننے والی نہ ادا کی گئی فیس ایپل کو 4.5 ارب ڈالرز تک کا نقصان دے سکتی ہے۔

اگلے ہفتے واشنگٹن میں انٹرنیشنل ٹریڈ کمیشن تین کویلکوم پیٹنٹس پر دلائل سنے گا۔ کویلکوم چاہتا ہے کہ کمیشن تمام آئی فون 7 ماڈلز کی درآمد پر پابندی لگا دے جو کویلکوم چپس استعمال نہیں کرتے۔

ایپلکویلکوم