امتحانات میں نقل روکنے کے لیے پورے ملک کا انٹرنیٹ بند

شمالی افریقہ کے ملک الجزائر نے جاری امتحانات میں نقل کی روک تھام کے لیے اس ہفتے ملک بھر کا انٹرنیٹ بند کردیا۔

یہ غیر معمولی حرکت 2016ء یں وزارت تعلیم کی جانب سے اٹھائے گئے غیر معمولی قدم کے بعد کی گئی ہے جب ایک امتحانی پرچہ آؤٹ ہو جانے کے بعد سوشل میڈیا ویب سائٹوں تک رسائی روک دی گئی ہے۔ لیکن یہ قدم بھی غیر مؤثر ثابت ہوا جس کی وجہ سے اس سال وزارت نے امتحانات کے دوران پورے ملک کا انٹرنیٹ بند کرنے کا حکم دیا۔

اس بلیک آؤٹ کا آغاز بدھ کو ہوا کہ جب ہائی اسکول کے امتحانات کا پہلا دن تھا۔ انٹرنیٹ سروسز امتحانی اوقات کے دوران چند گھنٹوں کے لیے بند کی گئی اور سوموار کو آخری پرچے تک ایسے اقدامات اٹھائے جاتے رہیں گے۔

امتحانات میں نقل کے معاملے کو کتنا سنجیدہ لیا جا رہا ہے، اس سے اندازہ لگائیے کہ حکومت نے امتحانی مراکز میں داخلے کے مقامات پر میٹل ڈٹیکٹرز لگائے ہیں تاکہ طلبہ کو موبائل فونز، ٹیبلٹس اور ایسے ہی دیگر گیجٹس لے کر داخل ہونے سے روکا جا سکے۔ یہی نہیں بلکہ امتحانی پرچوں کی چھپائی کے مراکز پر جیمز اور سکیورٹی کیمرے لگائے گئے ہیں۔

الجزیری ٹیلی کام کا کہنا ہے کہ انٹرنیٹ سروسز حکومت کی ہدایات پر منقطع کی گئی ہیں اور اس کا مطلب امتحانات کے بہترین انعقاد کو یقینی بنانا ہے۔

انٹرنیٹانٹرنیٹ بندشپابندی