فرانس نے اسکولوں میں اسمارٹ فون پر پابندی عائد کردی

اسمارٹ فونز کے بچوں پر اثرات ایک ایسی بحث ہے جس میں مثبت رائے رکھنے والوں کی تعداد منفی رائے رکھنے والوں سے بہت کم ہے۔ زیادہ تر لوگوں کا خیال ہے کہ اسمارٹ فون کا زیادہ استعمال بچوں کی صلاحیتوں کی بری طرح متاثر کررہا ہے۔ جبکہ ماہرین مسلسل خبردار کررہے ہیں کہ اسمارٹ فون کی لت صحت کے لیے اچھی نہیں۔

انہی باتوں کو مدنظر رکھتے ہوئے فرانس کی حکومت نے 15 سال سے کم عمر بچوں کے اسکول میں اسمارٹ فون کے استعمال پر پابندی لگا دی ہے۔ جبکہ اس سے زائد عمر کے بچوں کے اسکولوں کو خود فیصلہ کرنے کا اختیار دیا گیا ہے کہ وہ بچوں کو اسمارٹ فون رکھنے کی اجازت دیتے ہیں یا نہیں۔

یہ پابندی صرف اسمارٹ فون ہی نہیں بلکہ انٹرنیٹ سے کنکٹ ہو سکنے والے ہر آلے کے لیے ہے۔ موجودہ فرانسیسی صدر میکرون نے اپنی انتخابی مہم میں اس پابندی کا وعدہ کیا تھا۔

اس سے پہلے 2010ء میں فرانس اسکول کے اساتذہ پر بھی پابندی لگا چکا ہے کہ وہ پڑھانے کے دوران اسمارٹ فون استعمال نہیں کرسکتے۔