موزیلا نے فیس بک کا پتّہ کاٹ دیا

موزیلا نے اپنے فائرفاکس براؤزر کے لیے ایک ایڈ-آن جاری کیا ہے جو اُن صارفین کے لیے ہے جو اپنا فیس بک اکاؤنٹ ڈیلیٹ تو نہیں کرنا چاہتے لیکن اس کو قابو میں ضرور رکھنا چاہتے ہیں۔

"Facebook Container” نامی نیا ایکسٹینشن آپ کی فیس بک آئی ڈی کو باقی ویب سے جدا کرتا ہے یعنی وہ آپ کی دیگر ویب سرگرمیوں کو استعمال کرنے کے قابل نہیں رہتا۔

جب آپ یہ ایکسٹینشن انسٹال کرتے ہیں تو یہ فیس بک کی کوکیز کو ڈیلیٹ کردیتی ہے اور آپ کو سوشل نیٹ ورک سے لاگ آؤٹ کر دیتی ہے۔ اگلی بار جب بھی آپ فیس بک کھولیں گے آپ کو نیلے رنگ کا "container” ٹیب کھلا ہوا نظر آئے گا۔

اس ٹیبل سے آپ فیس بک کو اسی طرح استعمال کر سکتے ہیں جیسا کہ عام طور پر کرتے ہیں۔ البتہ جب آپ کسی لنک پر کلک کریں گے تو یہ کنٹینر سے باہر لوڈ ہوگا، اگر آپ کسی بھی فیس بک شیئر بٹن پر کلک کریں گے تو یہ فیس بک کنٹینر میں لوڈ ہوگا۔ مزید برآں، آپ اپنے فیس بک کے ساتھ تھرڈ پارٹی ایپس میں لاگ اِن نہیں ہو پائیں گے اور ویب سائٹوں پر موجود فیس بک کمنٹس اور لائیکس کے بٹن بھی کام نہیں کریں گے۔

فائرفاکس کا کہنا ہے کہ یہ فیس بک کو آپ کی ویب سرگرمی کے بارے میں معلومات جمع کرنے سے روکتا ہے کہ آپ اور کون کون سی ویب سائٹس دیکھتے ہیں۔

فیس بک کا پلیٹ فارم اور اس کا آف-سائٹ ایڈورٹائزنگ نیٹ ورک دیگر سائٹوں اور ایپس کو صارفین کے فیس بک ڈیٹا تک رسائی دیتا ہے چاہے صارفین فیس بک پر نہ ہوں تب بھی۔ فیس بک شاید واحد ادارہ ہو جو ایسا کرتا ہے۔

یہی حرکتیں ہیں جس کی وجہ سے فیس بک اس وقت سنگین مسائل سے دوچار ہے اور کیمبرج اینالٹکا کا معاملہ سامنے آنے کے بعد تو چند ہی ہفتوں میں اس کے حصص کو کئی ارب ڈالرز کا نقصان ہو چکا ہے۔

فائر فاکسفیس بک