ون پلس ایک ارب ڈالرز کی فروخت کرگیا

اسمارٹ فون بنانے والے چینی ادارے ون پلس نے پہلی بار ایک ارب ڈالرز کی فروخت کا سنگ میل عبور کرلیا ہے اور آج کی سخت ترین مقابلہ رکھنے والی مارکیٹ میں حیران کن طور پر منافع حاصل کیا ہے۔

ادارے کے چیف ایگزیکٹو پیٹ لاؤ کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال اس کی آمدنی دوگنی سے زیادہ ہوئی اور 1.4 ارب ڈالرز تک پہنچی۔

یہ خبر ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب ون پلس امریکا اور یورپ میں موبائل نیٹ ورکس کے ساتھ معاہدے کرکے اس میدان کے بڑے کھلاڑیوں کو چیلنج کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔

اسمارٹ فون مارکیٹ میں گزشتہ چند سالوں میں چینی برانڈز نے خوب جگہ بنائی ہے اور منافع بھی حاصل کیے ہیں، نتیجہ یہ ہے کہ ایچ ٹی سی اور موٹورولا جیسے مستحکم برانڈز مشکلات سے دوچار ہیں۔

ون پلس کی خاص بات یہ ہے کہ یہ براہ راست صارفین کو فون فروخت کرتا ہے، موبائل نیٹ ورکس کے ذریعے نہیں، البتہ اب اس سمت میں بھی کام کر رہا ہے جو ون پلس کے لیے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔

ون پلس