فون کے عادی افراد کے لیے خاص پروڈکٹ

آپ میں سے کون ایسا ہوگا جس نے آج تک نشے کی حد تک اسمارٹ فون کا عادی کوئی فرد نہ دیکھا ہو؟ ایسا شخص جو فون استعمال کرتا ہو، ضرورت کے لیے نہیں بلکہ عادتاً۔ وہ صرف فون اس لیے استعمال کرتا ہے کیونکہ اس کے پاس فون موجود ہے تو اسے چلانا بھی ضروری ہے۔

اگر آپ کا تعلق بھی، بدقسمتی سے، اسی قبیل سے ہے تو آسٹریا کے ایک ڈیزائنر نے آپ کے لیے ایک پروڈکٹ بنائی ہے جو آپ کے اس ‘نشے’ کو پورا کر سکتی ہے۔

کلیمنس شلنگر نے اسمارٹ فون جیسی کچھ ایسی چیزیں بنائی ہیں، جنہیں وہ Substitute Phones کا نام دے رہے ہیں یعنی متبادل فون۔ یہ اسمارٹ فون چلانے کے بنیادی خیال سے متاثر ہوکر بنائی گئی ہیں۔ ان میں چھوٹے چھوٹے سے دانے مختلف صورتوں میں لگے ہوئے ہیں، جو انہی حرکات و سکنات کو ذہن میں رکھ کر ترتیب دیے گئے ہیں جو فون کے استعمال کے وقت کی جاتی ہیں۔ جیسا کہ پیج اسکرول کرنا یا ڈیوائس کو ان لاک کرنا یا پھر زوم کے لیے پنچ کرنا وغیرہ۔

یہ عجیب و غریب پروڈکٹ فون استعمال نہ کرکے اپنی عادت کو ختم کرنے والے ان افراد کے لیے جو نفسیاتی علاج سے گزر رہے ہیں اور یہ واقعی اس کے لیے مددگار ہوگی۔ مذاق مت سمجھیے گا، لیکن ایسی رپورٹس بارہا منظر عام پر آئی ہیں کہ اسمارٹ فونز کا حد سے زیادہ استعمال ذہنی صحت کے مسائل کو جنم دیتا ہے خاص طور پر ڈپریشن یعنی ذہنی تناؤ کو ۔

شلنگر مستقبل میں اپنے آن لائن اسٹور پر Substitute Phones کو فروخت کرنا چاہتے ہیں البتہ ابھی اس کی قیمت ظاہر نہیں کی گئی ۔ آپ کا خیال ہے اس پروڈکٹ کے بارے میں؟

اسمارٹ فونعادینفسیاتی بیماری