ٹیسلا نے دنیا کی سب سے بڑی بیٹری تیار کر لی

امریکی کمپنی ٹیسلا Tesla نے جنوبی اسٹریلیا میں بجلی کے مسئلے کے حل کا وعدہ کیا تھا جو اس نے 100 دنوں سے بھی کم وقت میں دنیا کی سب سے بڑی "لیتھئیم آئن” بیٹری بنا کر پورا کر دیا ہے۔

امریکی کمپنی نے دنیا کی سب سے بڑی لیتھئیم آئن بیٹری ایک ریکاڈ وقت میں تیار کی ہے، ٹیسلا کمپنی کے سی ای او ایلون مسک Elon Musk نے ایک ٹویٹ کے ذریعے انکشاف کیا تھا کہ اسٹریلوی حکومت کے ساتھ ان کا ایک معاہدہ طے پا گیا ہے جس کی رو سے یہ ضخیم بیٹری 100 دنوں میں تیار کی جائے گی اور اگر کمپنی ایسا نہ کر سکی تو وہ اسے اسٹریلوی حکومت کو مفت میں پیش کرے گی۔

اسٹریلوی حکومت نے ایک بیان میں تصدیق کی ہے کہ 100 میگا واٹ کی یہ ضخیم بیٹری تیار ہے اور اگلے کچھ دنوں میں اس کی آزمائش کی جائے گی۔

دنیا کی سب سے بڑی لیتھئیم آئن بیٹری جنوبی اسٹریلیا میں توانائی کا مسئلہ حل کرے گی اور گرمیوں میں خطے کو اضافی توانائی فراہم کرے گی، ٹیسلا پاور پیکس Tesla Powerpacks نامی یہ بیٹریاں توانائی کے حصول کے لیے ہوائی ٹربائن اور سولر سیلز سے منسلک کی جائیں گی۔

ٹیسلا نے اسٹریلوی حکومت کے ساتھ یہ معاہدہ گزشتہ ستمبر کے اواخر میں کیا تھا جہاں سے 100 دنوں کی گنتی شروع کی گئی تاہم ٹیسلا دو ماہ کے اندر ہی اپنا وعدہ وفا کرنے میں کامیاب ہوگیا۔

خیال رہے کہ اس منصوبے کی مجموعی لاگت 50 ملین امریکی ڈالر ہے۔

بیٹریپاور پیکسٹیسلا