بٹ کوائن کے بعد ایتھریم کی قیمتوں میں بھی اضافہ

988

گزشتہ کئی دنوں سے انٹرنیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ استعمال ہونے والی آن لائن کرنسی بٹ کوائن کی قیمت میں ہوش ربا اضافے کی خبریں تو آپ پڑھ ہی چکے ہوں گے۔ جن کے مطابق صرف چند ماہ میں ہی بٹ کوائن کی قیمت چند سو ڈالر سے آتھ ہزار ڈالر تک جا پہنچی ہیں۔ اور یہ اضافہ ہنوز جاری ہے۔ بٹ کوائن کی قیمتوں میں اس بے پناہ اضافے نے سرمایہ کاری اور آن لائن مبادلات میں دیگر تمام کرنسیوں کے بہت پیچھے چھوڑ دیا ہے۔

تاہم تازہ ترین اطلاعات کے مطابق آن لائن کرپٹوکرنسیز میں بٹ کوائن کی قریب ترین حریف "ایتھریم” نے بھی قیمت میں چرھاؤ کی پرواز پکڑ لی ہے۔ اور ٹیک آف کرتے ہی ایک ایتھر کی قیمت 14 فی صد اضافے سے 442 ڈالر فی ایتھریم تک جا پہنچی ہے۔ جو کہ رواں سال جون کے بعد بلند ترین سطح ہے۔

چند ہفتے پہلے ایتھریم والٹ میں ایک بگ کے انکشاف کے بعد تقریبا150 ملین ڈالر مالیت کے برابر ایتھر منجمد ہو گئے تھے۔ جس کی وجہ سے ایتھریم کی قیمت میں جزوی طور پر کمی آئی تھی۔ لیکن گزشتہ ایک ہفتے میں مجموعی طور پر قیمتوں میں تیس فی صد اضافے نے ایتھریم کو بٹ کوائن کے ٹریک پر لا کھڑا کیا ہے۔

بٹ کوائن میں سرمایہ کاری کرنے والے ایک بڑے سرمایہ کار کے مطابق ایتھریم کی قیمتوں میں یہ اضافہ رکنے والا نہیں۔ ان کے مطابق اس سال کے آخر تک ایک ایتھر کی قیمت پانچ سو ڈالر تک پہنچ سکتی ہے۔  جبکہ اس اضافے سے بٹ کوائن پر بھی کوئی خاص فرق نہیں پڑے گا۔