کیمرا ایپ جو تصویر ‘ڈیولپ’ کرنے میں تین دن لگائے گی

1,062

اسمارٹ فونز کی بدولت اب تصاویر کھینچنا ہماری عادت سی بن چکی ہے۔ کبھی بھی، کہیں بھی، کوئی بھی شخص اپنا فون نکال کر جتنی مرضی چاہے تصاویر لے سکتا ہے۔ پھر یہ سہولت بھی کہ آپ فوری طور پر دیکھ سکتے ہیں کہ تصویر کیسی آئے ہے؟ اور اگر پسند نہیں آتی تو اسے فوراًً ڈیلیٹ بھی کیا جا سکتا ہے۔ لیکن اس ‘جدید’ دور میں بھی ایک ایسی کیمرا ایپ مشہور ہو رہی ہے جو پرانے کیمروں کی نقل کرتی ہے یعنی آپ کو تصویر ‘ڈیولپ’ ہونے کے لیے تین دن کا انتظار کرنا پڑتا ہے۔

99 سینٹ میں فروخت ہونے والی اس ایپ کا نام "گوڈیک کیم” (Gudak Cam) ہے اور یہ جنوبی کوریا اور جاپان میں خوب مقبولیت حاصل کر رہی ہے، بالخصوص نو عمر لڑکیاں تو اس کی دیوانی ہیں۔ ایپ رواں سال کے اوائل میں جاری ہوئی تھی اور اس کی ظاہری صورت اور احساس سب ایسا ہی ہے جیسا کبھی کوڈیک کے ڈسپوزیبل کیمروں کا ہوتا تھا۔ ایپ کے لیے ضروری ہوگا کہ آپ ایک نقلی "فلم رول” ڈالیں جو 24 تصاویر لے سکتا ہے۔ یہ رول مکمل ہو جائے تبھی آپ اسے "ڈیولپنگ پروسس” سے گزار سکتے ہیں جس میں تین دن لگیں گے یہاں تک کہ یہ دورانیہ گزرنے کے بعد آپ اپنی تصاویر دیکھ سکیں گے۔ گوڈیک کیم میں آپ کو اپنے ورچوئل کیمرے میں نیا فلم رول ڈالنے کے لیے بھی چند گھنٹے انتظار کرنا پڑے گا۔

ہے نا حیرانگی کی بات؟ یہ سب بہت ہی عجیب سا لگ رہا ہے اور حقیقت بھی یہی ہے کہ یہ بات کافی حد تک درست بھی ہے لیکن گوڈیک کی اصل کشش اسی حقیقت میں ہے۔ یہ صارفین کو ہر تصویر لینے سے پہلے ویسے ہی سوچنے پر مجبور کرتی ہے، جیسا کبھی پرانے کیمروں کے صارف کرتے تھے۔ ایپ چاہتی ہے کہ صارفین درجنوں تصاویر لینے کے بجائے وہ ایک پر اکتفا کریں اور اس پر محنت کریں اور نتیجتاً بہت کم لیکن بہت اچھی تصاویر لیں۔

جمالیاتی لحاظ سے دیکھا جائے تو بھی ایپ پرانے کیمروں کی طرح کام کرتی ہے اور ایسا محسوس ہوتا ہے کہ آپ کوئی پرانا کیمرا ہی تھامے ہوئے ہیں جیسا کہ تصویر لینے کے لیے آپ کو ایپ کا چھوٹا ویو فائنڈر استعمال کرنا پڑتا ہے۔ یہ سب کچھ ملا کر گوڈیک کیم کو تمام روایتی کیمرا ایپس سے مختلف بناتا ہے۔

کیا گوڈیک مذاق کررہا ہے یا وہ کسی سمت ایک اہم قدم اٹھا رہا ہے؟ اس سے پہلے جان لیں کہ اس وقت بھی ایپ کے 13 لاکھ صارفین ہیں یعنی ہم کہہ سکتے ہیں کہ ایپ بالکل درست سمت میں جا رہی ہے۔