کرپٹو کرنسی کا تعلیم کے لیے 29 ملین ڈالرز کا عطیہ

814

دنیا کی تیسری سب سے بڑی کرپٹو کرنسی ‘رپل‘ نے ضرورت مند اساتذہ کے لیے 29 ملین ڈالرز کا بھاری عطیہ دیا ہے۔

ایک ایسے وقت میں جب عام تاثر یہی ہے کہ کرپٹو کرنسیز نے کبھی کوئی اچھا کام نہیں کیا بلکہ یہ جرائم پیشہ افراد کی کرنسی ہے، کراؤڈفنڈنگ ویب سائٹ DonorsChoose.org نے اعلان کیا ہے کہ اس نے رپل کی جانب سے بہت بڑا عطیہ حاصل کیا ہے۔

رپل بٹ کوائن اور ایتھیریئم کے بعد دنیا کی تیسری سب سے بڑی کرپٹو کرنسی ‘رپل’ (XRP) رکھتا ہے اور اس نے ڈونرز چوز پر پیش کردہ تعلیمی منصوبوں کے لیے 29 ملین ڈالرز مالیت کی اپنی کرنسی دی ہے۔

ڈونرز چوز نے اساتذہ کو کراؤڈ فنڈنگ کی سہولت دے رکھی ہے کہ وہ کتابوں، تعلیمی ٹیکنالوجی اور دیگر ضروریات کے لیے اس کی ویب سائٹ پر عطیات کی درخواست دیے سکتے ہیں۔ ادارے کے مطابق سائٹ پر موجود 35 ہزار درخواستوں کے لیے ملنے والے تازہ ترین فنڈز ایک ملین یعنی 10 لاکھ طلبہ اور اساتذہ پر اثرات مرتب کریں گے، یعنی امریکا میں ہر چھ میں سے ایک اسکول پر۔

رپل نے کہا ہے کہ ان کا یہ قدم دوسروں کو بھی پیروی کرنے کی ترغیب دے گا۔ رپل نے یہ عطیہ اپنے ٹوکن XRP کی صورت میں دیا ہے جس کی مالیت 29 ملین ڈالرز کے برابر ہے۔