دنیا کی سب سے بڑی لیتھیم آئن بیٹری سو دنوں سے بھی کم مدت میں تیار

1,237

کاریں بنانے والی ٹیکنالوجی کمپنی ٹیسلا نے نامور شخصیت ایلون مسک کی سربراہی میں ان کے بنائے گئے ڈیزائن کے مطابق دنیا کی سب سے بڑی لیتھیم آئن بیٹری صرف سو دنوں میں تیار کر لی۔

ایک سو میگا واٹ پاور کی حامل اس بیٹری کی تعمیر بھی ڈرامائی انداز میں شروع ہوئی۔ جب ٹویٹر پر سپیس۔ایکس کے چیف ایکزیکٹو ایلون مسک نے کمپنی کے ساتھ یہ شرط لگائی کہ وہ سو دنوں سے بھی کم وقت میں دنیا کی سب سے بڑی بیٹری تیار کر کے دکھائیں گے۔ شرط کے مطابق اگر وہ اس میں کامیاب ہو گئے تو انہیں 50 میلین ڈالر ملیں گے۔ اگر بیٹری بنانے میں سو دن سے زائد کا عرصہ لگا تو ڈیزائن کی مد ایک روپیہ بھی وصول نہیں کریں گے۔

گزشتہ بدھ کو جب ایلون مسک نے ایک ٹویٹ کے ذریعے بیٹری کی تعمیر مکمل ہونے کا اعلان کیا تو ابھی سو دن بھی پورے نہیں ہوئے تھے۔ یوں وہ پچاس میلین ڈالر کی شرط جیتنے کے ساتھ ورلڈ ریکارڈ قائم کرنے میں بھی کامیاب ہو گئے۔

ٹیسلا پاور کی جانب سے اس بیٹری کی تعمیر ایڈلیڈ کے شمال میں موجود ہوا سے بجلی بنانے والے فارم کے نزدیک کی گئی ہے۔ جہاں سے اسے بیک اپ کے طور پر نیشنل گرڈ سے منسلک کیا جائے گا۔
ایک اندازے کے یہ بیٹری مطابق پورے جنوبی آسٹریلیا کو بجلی فراہم کرنے میں مددگار ثابت ہو گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept