فیس بک بغیر اشتہار کے پیڈ ورژن پر غور کرتا ہوا

950

فیس بک جو "ہمیشہ مفت” رہنے کا دعویٰ کرتا ہے، پے در پے تنازعات میں گھر جانے کے بعد اب ایک ایسا ورژن جاری کرنے پر غور کر رہا ہے جس میں صارفین کو کوئی اشتہار نظر نہ آئے اور ساتھ ہی وہ اپنی ذاتی معلومات کے حوالے سے بھی پریشان نہ ہوں۔ جی ہاں! اس کے لیے صارفین کو ادائیگی کرنا ہوگی۔

حالیہ کیمبرج اینالیٹکا اسکینڈل کی وجہ سے فیس بک سخت مشکلات سے دوچار ہے اور یہ خیال بھی اسی معاملے کی وجہ سے آیا۔ ویسے یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ فیس بک نے کسی ‘پیڈ ورژن’ پر غور کیا ہو لیکن حالیہ چند ہفتوں میں فیس بک نے مارکیٹ ریسرچ ضرور کی ہے اور اب تو چیف ایگزیکٹو مارک زکربرگ بھی کچھ عرصے سے ایسے ورژن پر غور کر رہے ہیں۔

فیس بک اپنی 98 فیصد آمدنی اشتہارات سے حاصل کرتا ہے، جس کے لیے وہ صارف کے ڈیٹا کو ہدف پر رکھتا ہے اور اسی کو استعمال کرتا ہے۔ گزشتہ سال 41 ارب ڈالرز اسی بزنس ماڈل نے کما کر دیے ہیں، اس لیے فیس بک اس کو چھوڑ تو نہیں سکتا لیکن وہ ان صارفین کے لیے ایک متبادل ضرور پیش کرنا چاہے گا جو اشتہارات کی وجہ سے پریشان ہیں اور اس سے بھی بڑھ کر اپنی ذاتی معلومات کے حوالے سے۔ دیکھتے ہیں یہ خیال کب حقیقت کا روپ دھارتا ہے۔