فیس بک کا مفت انٹرنیٹ 100 ملین افراد تک پہنچ گیا

2,021

فیس بک ترقی پذیر دنیا کو آن لائن لانے کا کام کر رہا ہے، وہ بھی ایسے وقت میں جب ترقی یافتہ دنیا میں اس پر کافی تنقید کی جا رہی ہے۔ مارک زکربرگ نے آج 2018ء کی پہلی سہ ماہی کی آمدنی کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ ہماری internet.org کوششوں نے تقریباً 100 ملین افراد کو انٹرنیٹ تک رسائی حاصل کرنے میں مدد دی، جن کے پاس پہلے انٹرنیٹ موجود نہیں تھا۔ یہ نومبر 2016ء کے مقابلے میں 40 ملین زیادہ افراد ہیں۔

Internet.org اپنی فری بیسکس ایپ کا استعمال کرتے ہوئے کم بینڈوڈتھ کی سروسز تک اور مقامی اداروں کی جانب سے ایکسپریس وائی فائی ہاٹ اسپاٹس کے ذریعے عوام کو انٹرنیٹ تک رسائی دیتا ہے۔ فیس بک اپنے شمسی توانائی سے چلنے والے ایکوئیلا ڈرون پر بھی تجربات کر رہا ہے، جو دور دراز علاقوں میں بینڈوڈتھ فراہم کرنے کے قابل ہوگا۔

حال ہی میں فیس بک ریاست نیو میکسیکو میں LTE رسائی فراہم کرنے کے لیے ایکوئیلا کو آزمانے کے لیے حکومت کی اجازت کا طلب گار تھا۔ فیس بک مناسب موبائل نیٹ ورکس سے محروم علاقوں میں بینڈوڈتھ کی فراہمی کے لیے لیزرز اور سیٹیلائٹس کا استعمال کرنے کے بھی تجربات کرچکا ہے۔

البتہ فیس بک کو اس منصوبے پر سخت تنقید کا سامنا بھی کرنا پڑا ہے کیونکہ یہ ویب تک رسائی کی کھلی آزادی نہیں دیتا بلکہ اسے محدود کرتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ بھارت میں اس پر پابندی لگائی گئی۔ لیکن دیگر حلقوں کا کہنا ہے کہ کچھ نہ ہونے سے کچھ ہونا بہتر ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept