فیس بک پر 14 ملین صارفین کی پرائیوٹ پوسٹس پبلک ہوگئیں

2,972

فیس بک ایک مرتبہ پھر پرائیویسی تنازع میں گھر گیا ہے کیونکہ انکشاف ہوا ہے کہ ایک غلطی کی وجہ سے اس کے تقریباً 14 ملین صارفین کی ایسی پوسٹس پبلک ہوگئی تھیں جو دراصل پرائیوٹ طور پر پبلش کی گئی تھیں۔

دراصل فیس بک صارفین کے پروفائل پر ایک فیچر کو ٹیسٹ کیا جا رہا تھا کہ ڈیولپرز کا سامنا ایک بگ سے ہوا جس سے "چند” صارفین کی پوسٹس کو دنیا بھر کے سامنے ظاہر ہوگئیں حالانکہ انہوں نے یہ پوسٹس پرائیوٹ کی گئی تھیں۔ یہ خامی نیا "فیچرڈ آئٹمز” آپشن ٹیسٹ کرتے ہوئے سامنے آئی جو صارفین کو اپنی تصاویر اور دیگر مواد نمایاں کرنے کی اجازت دے گا۔

چند اکاؤنٹس میں پوسٹس ڈیفالٹ میں ہی پبلک تھیں۔ البتہ ہر فیس بک صارف اس سیٹنگ کو خود تبدیل کر سکتا ہے کہ وہ اپنی پوسٹس کو صرف دوستوں تک محدود رکھنا چاہتا ہے یا مخصوص افراد تک۔

اس خبر کو سب سے پہلے سی این این نے پیش کیا جس کے مطابق گزشتہ ماہ چار دن تک کئی ملین صارفین کی یہ سیٹنگز معطل رہی تھیں۔ 18 مئی کو سامنے آنے والے اس مسئلے کو 22 مئی کو حل کرنے کی کوشش شروع کی گئی اور 27 مئی کو یہ مسئلہ مکمل طور پر حل ہوا۔

کیمبرج اینالیٹکا کے معاملے کے بعد حال ہی میں چین کے اداروں کے ساتھ ڈیٹا شیئرنگ معاہدے کے سامنے آنے کے بعد فیس بک کا ویسے ہی برا حال ہوا ہے، اس پر طرّہ یہ نیا معاملہ، جو فیس بک پر اعتماد کو بالکل ختم کر سکتا ہے۔