فرانس میں سوشل میڈیا والدین کی منظوری سے مشروط، قانون پیش

759

فرانس کی حکومت نے بدھ کے روز فرینچ پارلیمنٹ میں ایک ایسے قانون کا بل پیش کیا ہے جس کے تحت 16 سال سے کم عمر بچوں کو فیس بک یا کسی بھی دیگر سوشل میڈیا ویب سائٹ پر اکاؤنٹ بنانے سے پہلے والدین کی منظوری درکار ہوگی۔

قانون میں صارفین کے ڈیٹا کی پرائیویسی کے حوالے سے بھی ترمیم تجویز کی گئی ہے تاکہ صارفین اپنے اس ڈیٹا تک رسائی حاصل کر سکیں جو یہ کمپنیاں لوگوں کے بارے میں جمع کرتی ہیں اور اکثر اوقات دیگر اداروں کو فروخت کر دیتی ہیں۔

اس قانون کا مسودہ ہفتہ وار میٹنگ میں حکومت سے منظور کرانے کے بعد پارلیمنٹ میں پیش کیا گیا ہے جہاں سے پاس ہونے کے بعد اسے قانون کا درجہ حاصل ہوجائے گا۔

اس قانون کی منظوری کے بعد سوشل میڈیا کمپنیوں کو مجبور کیا جا سکے گا کہ وہ صارفین کو ان کے ذاتی ڈیٹا تک رسائی دیں جس میں سے جو تفصیلات وہ چاہیں ایڈٹ یا ڈیلیٹ کر سکیں گے۔

فرینچ وزارتِ انصاف کا کہنا ہے بچوں کے معاملے میں والدین کی منظوری کے طور پر سوشل میڈیا ویب سائٹس پر ایک چیک باکس متعارف کرایا جائے گا جس سے والدین کی رضا مندی کی تصدیق ہوگی اور اسے قانونی تحفظ حاصل ہوگا