گلیکسی نوٹ8، بیٹری صفر ہو جائے تو فون مردہ

2,190

گلیکسی نوٹ7 کا عبرت ناک انجام ابھی سال ڈیڑھ پہلے ہی کی بات ہے۔ یہ وہ فون تھا جس نے سام سنگ کو دنیا بھر میں بدنام کیا۔ یہاں تک کہ دنیا بھر میں جہاں کوئی ہوائی جہاز پرواز کے لیے تیار ہوتا تو پہلے علان کیا جاتا تھا کہ کسی کے پاس گلیکسی نوٹ 7 ہے تو انتظامیہ کے حوالے کردے۔ اس کی وجہ تھی اس میں آگ لگ جانا اور پھٹ جانا۔ اس "منحوس” فون نے سام سنگ کو مجبور کیا کہ وہ دنیا بھر میں فروخت کیے گئے تمام سیٹ واپس لے اور آئندہ کے لیے اپنے فون کو محفوظ بنانے کے لیے اقدامات اٹھائے۔

اس فون کی وجہ سے سام سنگ کی ساکھ کو جو دھچکا پہنچا، وہ گلیکسی ایس8، ایس8 پلس اور نئے نوٹ8 کے ذریعے دھونے کی کوشش کی گئی اور حقیقت یہی ہے کہ یہ فونز صارفین اور ماہرین دونوں کی جانب سے خوب سراہے گئے۔ ان بیٹری میں آگ لگ جانے یا اس کے پھٹ جانے کا مسئلہ تو نہیں ہے لیکن حال ہی میں ایک عجیب سے مسئلے نے ضرور سر اٹھایا ہے کہ چند سیٹ سرے سے چارج ہی نہیں ہو رہے۔

نوٹ8 اور ایس8 پلس کے صارفین کا کہنا ہے کہ یہ مسئلہ تب ہوت ہے جب بیٹری صفر ہو جائے۔ ایسا ہونے کی صورت میں نہ صرف یہ کہ فون بند ہو جاتا ہے بلکہ یہ چارج بھی نہیں ہوتا اور اس میں زندگی کے کوئی آثار نظر نہیں آتے۔ یہ متاثرہ صارفین مختلف چارجنگ کیبلز استعمال کر چکے ہیں اور ان کی فون کو سیف موڈ میں کھولنے کی کوششیں بھی لاحاصل رہی ہیں۔

سام سنگ نے جہاں اس مسئلے کو جلد حل کرنے کا کہا ہے وہیں متاثرہ صارفین سے کہا ہے کہ وہ اپنے وارنٹی شدہ فون واپس کریں، بدلے میں انہیں دوسرا فون دیا جائے گا۔

ابھی تو یہ کہنا مشکل ہے کہ یہ مسئلہ کتنے بڑے پیمانے پر پھیلا ہوا ہے لیکن اسے جتنا جلدی حل کیا جائے اتنا بہتر ہوگا، ورنہ سام سنگ گلیکسی 9 کی رونمائی سے پہلے یہ کمپنی کو ساکھ کے ایک اور بڑے بحران سے دوچار کر سکتا ہے۔