ہمیشہ کنیکٹ رہنے والا پہلا ونڈوز 10 پی سی خریدیں

1,907

ایچ پی کا پہلا ونڈوز 10 پی سی جو ARM پروسیسر کا حامل ہے اب قبل از وقت آرڈر کے لیے دستیاب ہے اور قیمت ہے 999 ڈالرز!

یہ 9 مارچ سے صارفین کو شپ کیا جائے گا اور دنیا کے پہلے "ہمیشہ کنکٹ رہنے والے پی سیز” میں سے ایک ہے جن کا وعدہ ایچ پی کے علاوہ اسوس اور لینوو نے کیا تھا۔

ایچ پی کا اینوی x2 ٹو-اِن-ون ٹیبلٹ 12.3 انچ کی ٹچ اسکرین رکھتا ہے جس میں ایک کنارے سے دوسرے کنارے تک کا 1920 ضرب 1280 پکسل کا ڈسپلے ہے۔ یہ ایچ پی اسپیکٹر x2 جیسا لگتا ہے، جو گزشتہ سال جاری کیا گیا تھا۔ یہ کویلکوم کے اسنیپ ڈریگن 835 پروسیسر سے لیس ہے اور اس میں ہے 4 جی بی ریم اور 128 جی بی کی یونیورسل فلیش اسٹوریج۔ اس کے علاوہ اس میں کویلکوم کا ایڈرینو 540 جی پی یو ہے۔ بلوٹوتھ 5.0 اور 802.11 اے سی وائی-فائی بھی ہیں۔ ایک نینو سم کارڈ ریڈر اسے LTE ڈیٹا تک رسائی دیتا ہے اور ساتھ ہی اینوی میں ہے یو ایس بی 3.1 ٹائپ-سی پورٹ، مائيکرو ایس ڈی کارڈ سلاٹ اور ہیڈفون جیک بھی۔ اس کے اسٹیریو اسپیکر بینگ اینڈ اولوفسن کی شراکت داری سے بنائے گئے ہیں۔

اس کی پشت پر 13 میگاپکسل کا کیمرا ہے جبکہ سیلفی کیمرا بھی 5 میگاپکسل کا ہے۔ ایچ پی اینوی x2 میں تین مائیکروفون ایرے بھی ہیں اور ایک ایسا بیک لٹ کی بورڈ بھی الگ ہو سکتا ہے۔ ٹیبلٹ ونڈوز 10 ایس چلاتا ہے، لیکن اسے ونڈوز 10 پر اپگریڈ کرنا بالکل مفت ہے۔

اس کی ساخت اور بیٹری لائف سے صاف ظاہر ہے کہ اسے زیادہ سفر کرنے والوں کے لیے بنایا گیا ہے، یا پھر ہم جیسوں کے جو لوڈ شیڈنگ کا عذاب بھگتتے ہیں۔ ایچ پی اینوی x2 ساڑھے 11 ضرب 8.3 ضرب 0.27 انچ کی پیمائش رکھتا ہے اور اس کا وزن ہے صرف 1.54 پونڈز۔ بیٹری لائف بہت ہی جاندار ہے، ایچ پی کا دعویٰ ہے کہ یہ فل ایچ ڈی وڈیوز چلاتے ہوئے بھی 19 گھنٹے تک کی بیٹری رکھتا ہے۔

البتہ اسی وجہ سے اس کی قیمت بھی بہت ہی زیادہ ہے۔ اتنی چھوٹی نوٹ بک کے لیے ایک ہزار ڈالرز کی ادائیگی کرنا بہت سوں کے لیے مشکل ہوگا لیکن اگر بیٹری لائف اور ہمیشہ کنیکٹ رہنے کے معاملے میں یہ توقعات پر پورا اترا تو اتنا مہنگا سودا نہیں ہوگا۔