HTC بنائے گا دنیا کا پہلا بلاک چین اسمارٹ فون

1,786

برطانوی اخبار انڈیپنڈنٹ میں شائع ہونے والی خبر کے مطابق ایچ ٹی سی دنیا کا پہلا بلاک چین ٹیکنالوجی پر مشتمل اسمارٹ فون متعارف کروانے جا رہا ہے۔ اس فون کو Exodus کا نام دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ تائیوان کی اسمارٹ فون کمپنی ایچ ٹی سی گزشتہ کافی عرصے سے بحران کا شکار ہے۔ اور خیال کیا جا رہا تھا کہ اس کا موبائل ڈویژن بند ہو جائے گا۔ کیونکہ اس ڈویژن کے اکثر حصے گوگل کو پہلے ہی فروخت کیے جا چکے ہیں۔ لیکن دنیا کے پہلے بلاک چین اسمارٹ فون کا اعلان کر کے ایچ ٹی سی نے ٹیکنالوجی حلقوں کو حیران کر دیا ہے۔

یہاں قارئین کی دلچسپی کے لیے ہم بتاتے چلیں کہ ایچ ٹی سی ہمیشہ سے ہی نئی ٹیکنالوجی متعارف کروانے میں پہل کرتا رہا ہے۔ دنیا کا پہلا اینڈروئیڈ اسمارٹ فون ایچ ٹی سی نے ہی تیار کیا تھا۔ جبکہ پہلا گوگل نکسس Nexus ہینڈ سیٹ بھی اسی کمپنی کا متعارف کردہ ہے۔ بات یہیں پر ختم نہیں ہوتی بلکہ دنیا کا سب سے پہلا فیس بک فون بھی ایچ ٹی سی نے ہی متعارف کروایا تھا۔ اور سب سے بڑھ کر یہ کہ کمپنی کے پاس ایک نہیں بلکہ دو 4G فونز اس وقت بھی موجود تھے جب چند سال پہلے ابھی 4G اور وائی میکس ٹیکنالوجیز کو آزمائشی بنیادوں پر متعارف کروایا جا رہا تھا۔

اس تاریخ کو پس منظر کے طور پر دیکھا جائے تو یہ اندازہ لگانا چنداں مشکل نہیں کہ ایچ ٹی سی ایک بار پھر "سب سے پہلے” کا تاج اپنے سر سجائے گا اور دنیا کا پہلا بلاک چین ٹیکنالوجی کا حامل اسمارٹ فون متعارف کروائے گا۔

کمپنی ترجمان کی جانب سے فون کی تکنیکی تفصیلات سے آگاہ نہیں کیا گیا۔ البتہ اتنا ضرور بتایا گیا ہے کہ اس ٹیکنالوجی کی مدد سے صارفین غیر مرکزیت پر مبنی ایپس اور محفوظ ترین ہارڈوئیر سے لطف اندوز ہو سکیں گے۔ نیز یہ ٹیکنالوجی صارفین کی شناخت، اثاثہ جات، ای میلز اور پیغامات وغیرہ کے تحفظ کو یقینی بنائے گی۔ کیونکہ یہ ٹیکنالوجی کسی ایک اتھارٹی کے کنٹرول میں نہیں ہو گی۔ جو کہ بلاک چین کی سب سے بڑی خصوصیت ہے۔

دوسرے الفاظ میں ہم کہ سکتے ہیں کہ یہ فون اینڈروئیڈ آپریٹنگ نظام پر انحصار نہیں کرے گا۔ بلکہ اس کا اپنا علحیدہ نظام تشکیل دیا گیا ہے۔ ایچ ٹی سی کی جانب سے دنیا کے پہلے بلاک چین اسمارٹ فون کی مزید تفصیلات سامنے آنے پر ہم اپنے قارئین کو بروقت آگاہ کرتے رہیں گے۔