انسٹاگرام نے یوٹیوب کی مانند طویل ویڈیوز کا فیچر متعارف کروا دیا

2,692

سال 2012 میں انسٹاگرام کی قیمت واٹس اپ سے بھی کہیں کم تھی۔ لیکن چھ سال بعد یعنی آج 2018 کے وسط میں انسٹاگرام گوگل کی مشہور عالم سائٹ یوٹیوب سے بھی ٹکر لینے جا رہا ہے۔ کیونکہ خبر ہے کہ انسٹاگرام نے یوٹیوب کی مانند ویڈیو فیچر آئی جی ٹی وی IGTV سروس کا اعلان کر دیا ہے۔

سان فرانسسکو میں منعقد ہونے والی ایک تقریب میں کمپنی کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ اب انسٹاگرام صارفین اپنے اکاؤنٹس سے باآسانی ویڈیوز تیار کر کے اپلوڈ کر سکتے ہیں۔ جن کا دورانیہ زیادہ سے زیادہ ایک گھنٹے تک ہو سکتا ہے۔

واضح رہے کہ انسٹاگرام پر اس سے پہلے بھی ویڈیو اپلوڈ کرنے کی سہولت موجود تھی لیکن اس کا دورانیہ صرف ایک منٹ تک محدود تھا۔ جبکہ اب صارفین ایک گھنٹے پر مشتمل ویڈیو تیار کر کے IGTV پر اپلوڈ کر سکیں گے۔

یہاں ہم قارئین کو یہ بھی بتاتے چلیں کہ IGTV کی باقاعدہ علیحدہ ایپ بھی موجود ہے۔ تاہم اب صارفین اس فیچر کو انسٹاگرام کے اندر رہتے ہوئے بھی استعمال کر سکیں گے۔ جوں ہی صارف لاگ ان ہو گا تو یہ ویڈیوز خودبخود چلنا شروع ہو جائیں گی۔ اس کا انحصار اس بات پر بھی ہے کہ صارف کن شخصیات یا چینلز کی پیروی کرتا ہے۔ ان ہی کی تیارکردہ ویڈیوز دکھائی جائیں گی۔

ایپ میں صارفین کے لیے ویڈیوز کی درجہ بندی کے لیے مختلف ٹیبز بھی موجود ہوں گے۔ جن میں For You، Following، اور Popular جیسے ٹیبز شامل ہیں۔ جبکہ ایک اضافی فیچر Continue Watching کے نام سے بھی ہے جس کی مدد سے آپ ویڈیوز کو وہیں سے دیکھنا شروع کر سکتے ہیں جہاں سے تعطل آیا تھا۔

کمپنی ترجمان کا کہنا ہے کہ فی الحال ویڈیوز میں اشتہارات نہیں دکھائے جائیں گے۔ تاہم مستقبل قریب میں اس امکان کو رد نہیں کیا جا سکتا۔ جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ جلد ہی انسٹاگرام کا IGTV پلیٹ فارم یوٹیوب کے نقش قدم پر چلتے ہوئے اپنے چینل مالکان کو مالی فوائد بھی فراہم کرے گا۔

فیس بک کی ذیلی کمپنی انسٹاگرام کا یہ قدم اس کے حریف گوگل کی یوٹیوب پر کتنا اثر انداز ہو سکتا ہے یہ تو وقت ہی بتائے گا۔ البتہ انسٹاگرام ایک مشہور سوشل میڈیا پلیٹ فارم ہے اس لیے یقیناً اس کا فائدہ ویڈیو سائٹ کو بھی ہو گا۔