انٹیل نے یہ کی چینز کیوں بنائی تھیں؟

1,561

پروسیسرز بنانے والے دنیا کے بڑے اداروں میں سے ایک انٹیل آجکل ایک بڑے بحران سے گزر رہا ہے۔ لیکن کیا آپ جانتے ہیں اس کی آخری بڑی غلطی کو کتنا عرصہ ہو گیا ہے؟ پورے 24 سال!

انٹیل نے 1993ء میں اپنی پینٹیئم سیریز میں پینٹیئم پی5 چپس متعارف کروائی تھیں لیکن اگلے سال ہی ان میں ایک بگ سامنے آیا۔ گو کہ زیادہ تر صارفین متاثر نہیں ہوئے لیکن نیو یارک ٹائمز کی ایک خبر نے تہلکہ مچا دیا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ حساب کتاب میں معمولی سی غلطی کی وجہ سے سائنس دانوں اور انجینیئرز کا کام متاثر ہو سکتا ہے۔

بالآخر ہوا یہ کہ انٹیل نے ایک ملین چپس واپس لیں اور انہیں پھینکنے یا ری سائیکل کرنے کے بجائے کی چینز (key chains) میں تبدیل کردیا۔ جنہیں 1995ء میں انٹیل کے ملازمین میں تقسیم کیا گیا۔ ہو سکتا ہے آپ سوچ رہے ہوں کہ یہ کی چینز اس لیے بنائی گئی تھیں تاکہ انٹیل ملازمین اپنی غلطی کو یاد رکھیں اور جب بھی گاڑی یا گھر کا تالا کھولیں تو یہ کی چین انہیں اپنی غلطی یاد دلائے لیکن حقیقت ایسی نہیں۔

دراصل کی چین پر انٹیل کے اس وقت کے سربراہ اینڈی گروو کا ایک خوبصورت پیغام درج تھا:

"Bad companies are destroyed by crises; good companies survive them; great companies are improved by them.”

"یعنی برے ادارے بحران میں تباہ ہو جاتے ہیں؛ اچھے ادارے زندہ رہتے ہیں؛ عظیم ادارے اس سے بہتر ہوتے ہیں۔ ”

پھر دنیا نے دیکھا کہ 1994ء کے بعد انٹیل کی ترقی کی رفتار بڑھتی چلی گئی اور شاید ہی کبھی اس کی مصنوعات میں کوئی خامی پائی گئی۔ یہاں تک کہ 2017ء کے اواخر اور نئے سال کی ابتداء میں انٹیل چپس میں بڑی خامی دریافت ہوئی۔ یہ 1994ء کے پی 5 چپس کے نقص سے کہیں زیادہ بڑی نظر آتی ہے، کیونکہ اس سے بہت زیادہ ڈیوائسز خطرے کی زد میں ہیں۔

انٹیل نے ابھی تک یہ چپس واپس لینے کا کوئی ارادہ ظاہر کیا ہے اور نہ ہی ان کی چینز بنانے کے آثار نظر آتے ہیں۔ اس کے بجائے ادارہ آپریٹنگ سسٹم بنانے والوں اور دیگر اداروں کے ساتھ مل کر سافٹ ویئر اور فرم ویئر اپڈیٹس پر کام کر رہا ہے تاکہ اس مسئلے کو حل کیا جا سکے۔ اس لیے فی الحال تو ہماری نظریں اپڈیٹس پر ہیں، ہاں! اگر اس سے بھی کام نہ بنا تو پھر انتظار کریں گے بڑی جدید قسم کی کی چین کا، جس پر کوئی بہت ہی متاثر کن جملہ لکھا ہوگا!