کاسپریسکی اینٹی وائرس کے اشتہارات پر پابندی لگ گئی

1,313

سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹوئٹر نے روس کے معروف سائبر سکیورٹی ادارے کاسپریسکی لیب کے اشتہارات پر پابندی عائد کردی ہے۔ ٹوئٹر کا کہنا ہے کہ کاسپریسکی کے طریقہ کار اس کی اشتہاری پالیسی سے متصادم ہیں۔

کاسپریسکی نے ٹوئٹر کے اس دعوے کو سختی سے مسترد کیا ہے اور کہا ہے کہ ٹوئٹر سینسرشپ جیسے غیر منصفانہ اقدامات اٹھا رہا ہے۔

روسی اینٹی وائرس ادارے کو سابق سوویت انٹیلی جینس افسر یوجین کاسپریسکی نے بنایا ہے، جبکہ امریکی حکام بارہا کاسپریسکی کے حوالے سے اپنے خدشات ظاہر کر چکے ہیں کہ اس کے روسی انٹیلی جینس ایجنسیوں سے ممکنہ روابط ہیں۔

دسمبر 2017ء میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک قانون پر دستخظ کیے تھے جس کے مطابق امریکی اداروں میں کاسپریسکی لیب سکیورٹی سافٹویئر کے استعمال پر پابندی لگا دی گئی تھی۔

کاسپریسکی بارہا ان الزامات کی تردید کر چکا ہے بلکہ 2017ء کے اواخر میں اپنے سورس کوڈ کے آزادانہ تجزیے سمیت مختلف اقدامات بھی اٹھائے تھے اور ساتھ ہی ایشیا، امریکا اور یورپ میں "شفافیت مراکز” کھولنے کا بھی آغاز کیا۔

یاد رہے کہ جنوری میں فیس بک نے ایک بیان میں امریکی کانگریس کو بتایا تھا کہ انہوں نے اکتوبر 2017ء میں کاسپریسکی کے اینٹی وائرس سافٹویئر کو ان مصنوعات کی فہرست سے نکال دیا تھا جو وہ صارفین کے لیے پیش کرتے ہیں۔