خلاء میں لگژری ہوٹل بنانے کا روسی منصوبہ

1,512

ایک طرف جہاں امریکا کے نجی ادارے عام افراد کو خلاء میں، یا خلاء کے کنارے تک ہی سہی، لے جانے کے لیے کام کر رہی ہیں، وہیں روس اس سے کہیں بڑے منصوبے پر غور کر رہا ہے۔ روس کے خلائی ادارے ‘روسکوسموس’ کا منصوبہ ہے کہ وہ بین الاقوامی خلائی اسٹیشن پر ایک لگژری ہوٹل بنائے گا۔ بھاری بھرکم جیب والے افراد کم از کم 40 ملین ڈالرز خرچ کرکے ہفتہ ڈیڑھ کے لیے وہاں رہ سکیں گے۔ اضافی 20 ملین ڈالرز کے بدلے انہیں ایک خلاء باز کے ساتھ اسپیس واک یعنی خلائی چہل قدمی کا موقع بھی ملے گا۔

منصوبے کے تحت ایک دوسرا ماڈیول تیار کیا جائے گا جس پر 279 سے 446 ملین ڈالرز کی لاگت آئے گی۔ یہ حکمت عملی کانٹریکٹر RKK انرجیا بنا رہا ہے جو سائنس لیبارٹری اور پاور سپلائی اسٹیشن کے طور پر کام کرنے والے دو ماڈیولز بھی پہلے بنا چکا ہے۔ گو کہ دوسرا ماڈیول بھی منصوبے کا حصہ ہے لیکن روسی حکومت صرف پہلے ماڈیول کے لیے ادائیگی کر رہی ہے۔

ٹورسٹ ماڈیول باہر سے پہلے ماڈیول جیسا ہی ہوگا، بالکل اس طرح لیکن اس کے اندر چار سونے کی جگہیں ہوں گی جن میں سے ہر دو مکعب میٹر کی ہوگی اور سب کے ساتھ 9 انچ کی ایک کھڑکی بھی ہوگی۔ اس میں دو "میڈیکل اینڈ ہائیجین” اسٹیشنز اور ساتھ ساتھ 16 انچ کھڑکی کا حامل لاؤنج بھی ہوگا۔ جانے والے بھی تو کئی ملین ڈالرز صرف کریں گے اس لیے جگہ بھی تو ان کے شایان شان ہونی چاہیے۔

امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے ناسا کی جانب سے روس کے سویوز راکٹوں میں اپنے خلاء بازوں کے لیے جگہ حاصل کرنے کے خاتمے کے بعد آر کے کے انرجیا پرامید ہے کہ سویوز کی ہر پرواز میں سے ایک یا دو سیاح بھی ساتھ ہوں گے۔ بوئنگ یا اسپیس ایکس کے کمرشل کریو پروگرام شروع ہونے کے بعد سے امریکا خلاء بازوں کو بھیجنے کے لیے روس پر انحصار بند کردے گا۔

اس کام کے لیے ادارے کو 12 ایسے امیر و کبیر مسافروں کی ضرورت ہے جو 4 ملین ڈالرز کی پیشگی ادائیگی کر سکیں۔ اگر ہر سال کم از کم چھ مسافر اس خلائی ہوٹل میں ہفتہ بھر قیام کے لیے ادا کریں تو کمپنی سات سالوں میں اپنی سرمایہ کاری پوری کر سکتی ہے۔

واضح رہے کہ بین الاقوامی خلائی اسٹیشن 2028ء میں اپنی عمر پوری کرلے گا۔ اس ہوٹل کی تعمیر میں بھی پانچ سال لگیں گے اس لیے اگر روس سنجیدہ ہے تو اسے بہت جلدی کرنا ہوگی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept