کیا بٹ کوائن پر بھی 1 فیصد طبقہ قابض ہے؟

867

کیا بٹ کوائن اُس 1 فیصد طبقے کا ایک اور کھلونا ہے، جو آج بھی دنیا کی دولت کے بیشتر حصے پر قابض ہے؟ یہ وہ سوال ہے جس کا سامنا سوئٹزرلینڈ کے مشہور زمانہ بینک کریڈ سوئس کے ماہرین نے کیا اور پایا کہ 97 فیصد بٹ کوائن محض 4 فیصد ایڈریسز کے پاس ہیں۔

بینک کا کہنا ہے کہ محض ایک حلقے تک محدود ہونا – چاہے وہ انفرادی شخصیات ہوں یا ادارے- واضح کرتا ہے کہ چند کلیدی کھلاڑی بٹ کوائن مارکیٹ پر بہت اثر و رسوخ رکھتے ہیں۔

کرپٹو کرنسی سے ہٹ کر دیکھیں بھی تو اس وقت دنیا کے امیر ترین 1 فیصد طبقے کے پاس دنیا کی کل دولت کا نصف حصہ ہے۔ یہی وجہ ہے کہ بینک کہتا ہے کہ بٹ کوائن اور دیگرکرپٹو کرنسیز کا بڑا حصہ قیمتی اثاثہ جات کی طرح رکھا جا رہا ہے اور یوں اس کا بہاؤ اور دستیابی محدود ہو رہی ہے۔

2017ء بٹ کوائن سرمایہ کاروں کے لیے ایک ناقابل یقین سال رہا، جس کے دوران دسمبر میں یہ 20 ہزار ڈالرز کی حد تک گیا۔ سال میں ہمیں بٹ کوائن کی قیمت میں کل 1300 فیصد اضافہ دیکھنے کو ملا۔ 2017ء کے آغاز پر بٹ کوائن کی مارکیٹ 15.6 بلین ڈالرز تھی جو اختتام پر 320 بلین ڈالرز تک گئی ۔