لینووو کا آل-اسکرین فون جھوٹ نکلا

1,966

شاید ہی کبھی لینووو کے کسی فون پر دنیا بھر نے یوں نظریں جمائی ہوں، لیکن زیڈ5 کی گزشتہ روز لانچنگ ہوئی تو سب کی نگاہیں چین پر تھیں لیکن حقیقت یہ ہے کہ سخت مایوسی ہوئی ہے کیونکہ یہ آل-اسکرین فون نہیں ہے جیسا کہ مئی میں دعویٰ کیا گیا تھا بلکہ درحقیقت اس میں نیچے ایک پٹی بھی ہے اور اوپر بدنام زمانہ notch بھی۔

گو کہ لینووو کے مطابق اس کا notch آئی فون ٹین سے چھوٹا ہے، لیکن ہے تو سہی؟ ویسے زیڈ5 کا ڈسپلے طویل ہے، 6.2 انچ کی 19:9 آئی پی ایس ایل سی ڈی اسکرین اور 1080 پکسل ریزولیوشن۔ علاوہ ازیں، اس میں 16 میگاپکسل کے ڈوئیل کیمرے ہیں، فاسٹ چارجنگ بھی۔ لیکن ان میں سے کوئی بھی فیچر ایسا نہیں جو حیران کن ہو۔ البتہ ایک اچھی بات ضرور ہے کہ یہ فون سستا ہے۔ اس کی قیمت صرف 200 ڈالرز سے شروع ہوتی ہے اور یہ 12 جون سے دستیاب ہوگا۔ لیکن کیا یہ چین سے باہر فروخت کیا جائے گا؟ اس بارے میں ابھی کچھ نہیں کہا جا سکتا۔

لینووو نے دعویٰ کیا تھا کہ زیڈ 5 میں اسکرین-ٹو-باڈی تناسب 95 فیصد ہوگا لیکن حقیقت میں ایسا نہیں ہے، یہ 90 فیصد ہے، جو بہرحال گلیکسی ایس9 اور آئی فون ٹین سے تو زیادہ ہی ہے۔ اس فون میں زیادہ سے زیادہ 6 جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج بھی ہوگی یعنی 4 ٹیرابائٹس والی باتیں بھی غلط ہی ثابت ہوئی، جو ہمیں تو سننے میں ہی افواہ لگی تھی۔

اور ہاں! 3300 ملی ایمپیئر کی بیٹری کے ساتھ مشکل لگتا ہے کہ 45 دن کے اسٹینڈ بائے ٹائم کی باتیں بھی سچ ثابت ہوں۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ اپنی بہت اچھی قیمت کے ساتھ یہ کتنے صارفین کی توجہ حاصل کر پاتا ہے۔