نیٹو کو روس سے نیا خطرہ، برطانوی ڈیفنس چیف نے خبردار کردیا

587

برطانیہ کے چیف آف دی ڈیفنس سٹاف ایئر چیف مارشل سر سٹیورٹ پیچ Sir Stuart Peach نے خبردار کیا ہے روس برطانیہ اور نیٹو ممالک کی زیرِ سمندر انٹرنیٹ کیبل کاٹ کر ان کی کمیونیکیشن اور بین الأقوامی تجارت کو معطل کر سکتا ہے۔

برطانوی اخبار دی گارڈیئن کے مطابق سر پیچ کا کہنا ہے کہ یورپ کو امریکہ سے جوڑنے والی اٹلینٹک سمندری کیبلوں کے گرد اور دنیا کے دیگر مقامات پر روسی جہاز تواتر کے ساتھ منڈلاتے دیکھے گئے ہیں۔

سر پیچ کا مزید کہنا ہے کہ روس غیر روایتی جنگی تکنیک وضع کر رہا ہے جس میں انٹرنیٹ کیبلز کاٹنے سے بڑے پیمانے پر عالمی نقصان ہونے کی توقع ہے۔

یہ انتباہ پالیسی ایکسچینج تھنک ٹینک Policy Exchange think tank کی اس رپورٹ کے دو ہفتے بعد سامنے آیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ عالمی رابطوں کا 97 فیصد اور روزانہ کے 10 ٹریلیئن ڈالر کے مالی معاملات زیرِ سمندر بچھی انٹرنیٹ کیبلز کے ذریعے ہوتے ہیں۔

رپورٹ میں اس خدشے کا اظہار کیا گیا تھا کہ چونکہ بین الاقوامی سمندر کسی ریاستی ملکیت میں نہیں آتے لہذا بین الاقوامی قوانین کے تحت زیرِ سمندر بجھی انٹرنیٹ کیبلز کو کوئی مضبوط قانونی تحفظ حاصل نہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکیوں کو بھی اٹلینٹک سمندری کیبلز کے گرد روسی بحریہ کی سرگرمیوں پر خدشات ہیں،

یادر رہے کہ 2013 میں جب روس نے کرائمیا Crimea پر قبضہ کیا تھا تو سب سے پہلے اس نے زیرِ سمندر انٹرنیٹ کیبل کاٹ کر کرائمیا کا رابطہ باقی دنیا سے منقطع کر دیا تھا۔