نیا ٹیکس، آئی فون ہو جائے گا اور مہنگا!

887

ایپل بھارت میں اپنے کاروبار کو پھیلانے کا شدت سے خواہشمند ہے، لیکن حکومت ہند کی جانب سے اسے کوئی لفٹ ہی نہیں کروائی جا رہی۔ اب ایک نیا قانون تلوار کی طرح سر پر لٹک گیا ہے، جس کے مطابق بھارت میں اسمارٹ فونز پر امپورٹ ٹیکس کو 10 فیصد سے بڑھا کر 15 فیصد کردیا گیا ہے اور یہ فیصلہ ایپل کے کاروبار پر بری طرح اثر انداز ہو سکتا ہے۔ اب ایپل کی مرضی ہے کہ یہ اضافی ٹیکس خود پر برداشت کرلے، اور اس نئی مارکیٹ میں اپنے فون کی قیمت نہ بڑھنے دے، یا پھر آئی فون کو مزید مہنگا کرکے بھارت میں بیچے، ایک ایسا ملک جہاں وہ آئی فون کی مارکیٹ بڑھانے کے لیے سخت بے تاب ہے۔

انڈین سیلولر ایسوسی ایشن کے صدر پنکج مہندر نے کہا کہ ٹیکس میں یہ اضافہ مقامی مینوفیکچررز کی حوصلہ افزائی کرے گا جبکہ ماہرین کے مطابق یہ ایپل کو مجبور کرے گا کہ یہ بھارت میں خود آئی فون تیار کرے ورنہ امپورٹ یعنی درآمد پر اس کے مقاصد پورے نہیں ہوں گے۔

گو کہ رواں سال ایپل نے بھارت میں مینوفیکچرنگ شروع کردی تھی اور وہ اسے مزید پھیلانے کا بھی خواہشمند ہے لیکن اس وقت بھارت میں ایپل کی 88 فیصد ڈیوائسز درآمد ہوتی ہیں۔