این ویڈیا نے دھندلی ویڈیوز کو بھی سپر سلوموشن میں تبدیل کرنے کی ٹیکنالوجی دریافت کر لی

1,722

این ویڈیا کا نام آپ نے عموماً گرافک کارڈز کے حوالے سے سنا ہو گا۔ لیکن گزشتہ کچھ عرصہ سے این ویڈیا مصنوعی ذہانت کے میدان میں بھی بھاری سرمایہ کاری کر رہا ہے۔ کمپنی نے مستقبل کے روبوٹس کے لیے مصنوعی ذہانت پر مشتمل پراسیسر چپس بھی تیار کی ہیں۔ اسی سلسلے میں اہم پیش رفت یہ ہے کہ این ویڈیا نے موبائل سے بنائی گئی دھندلی ویڈیوز کو مصنوعی ذہانت کی مدد سے بہترین سلوموشن ویڈیوز میں تبدیل کرنے کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔

کمپنی کے تحقیق دانوں نے گہرے اکستاب Deep Learning پر مشتمل ایک ایسا نظام تشکیل دیا ہے جو اسٹینڈرڈ ویڈیو میں اضافی فریمز شامل کر کے اسے سلو موشن ویڈیو میں تبدیل کرتا ہے۔ اس کے نتیجے میں صرف 40 فریمز فی سیکنڈ سے ریکارڈ ہونے والی ویڈیو کو باآسانی 240 فریمز فی سیکنڈ میں تبدیل کیا گیا۔

اس مقصد کے لیے تحقیق دانوں نے 240 ایف پی ایس پر بنائی گئی 11000 ویڈیوز کو استعمال کیا تا کہ مصنوعی ذہانت یہ سیکھ سکے کہ اضافی فریمز کو کیسے تیار کرنا ہے۔ یوں ایک عام موبائل سے دھندلی ویڈیوز کو بھی مصنوعی ذہانت کی مدد سے اضافی فریمز شامل کر کے بہترین میعار کی شاہکار سلوموشن ویڈیوز میں تبدیل کر لیا گیا۔