سیلفی میں ناک 30 فیصد بڑی نظر آتی ہے، دلچسپ تحقیق

680

کیا آپ جانتے ہیں کہ آپ کی ناک درحقیقت اتنی بڑی نہیں جتنی کہ سیلفی میں نظر آتی ہے؟ چہرے کی پلاسٹک سرجری کرنے والے بورس پاسخوور کا کہنا ہے کہ ناک کی سرجری کرانے سے پہلے کوئی عمدہ پورٹریٹ فوٹو نکلوائیں اور پھر فیصلہ کریں کہ آپ نے کیا کرنا ہے۔

امریکن اکیڈمی آف فیشل پلاسٹک اینڈ ری کنسٹرکٹو سرجری کے سروے کے مطابق گزشتہ سال پلاسٹک سرجنوں کے پاس آنے والے نصف سے زیادہ افراد ایسے تھے جو بہتر سیلفی چاہتے تھے۔ لیکن سیلفی حقیقت کی درست عکاسی نہیں کرتی۔

بورس رٹگرز نیو جرسی میڈیکل اسکول میں کام کرتے ہیں اور کہتے ہیں کہ میرے پاس لوگ آتے ہیں اور وہ اپنا فون نکال کر کہتے ہیں یہ دیکھیں، میری ناک کتنی بڑی لگ رہی ہے۔ پھر بورس کو ثابت کرنا پڑا سیلفی آپ کی اصل شکل و صورت کی عکاسی نہیں کرتی۔

اس کام کے لیے انہوں نے ایک کمپیوٹر سائنٹسٹ کے ساتھ مل کر اوسط انسانی سر کا ماڈل تخلیق کیا۔ ٹیم نے جانچ کی کہ اگر ایک عام پورٹریٹ پانچ فٹ کے فاصلے سے لیا جائے اور اس کے مقابلے پر 12 انچ کے فاصلے سے ایک سیلفی لی جائے تو سیلفی میں ناک کتنی بڑی نظر آئے گی۔ نتیجہ نکلا کہ انہوں نے پایا کہ قریب سے تصویر لینے کی صورت میں مردوں کی ناک 30 فیصد اور عورتوں کی 29 فیصد زیادہ چوڑی نظر آتی ہے ۔ ان کی یہ تحقیق جاما فیشل پلاسٹک سرجری نامی جریدے میں شائع ہوئی ہے ۔

جو فوٹوگرافی جانتے ہیں انہیں تو بخوبی اندازہ ہوگا کہ بیشتر اسمارٹ فونز میں وائیڈ اینگل لینس نصب ہوتا ہے ۔ اس لینس سے قریب سے تصویر لی جائے تو شکل بگڑ سی جاتی ہے جیسا کہ ناک بڑی نظر آتی ہے وغیرہ ۔ یہی وجہ ہے کہ آئی فون X، پکسل 2 ایکس ایل اور گلیکسی نوٹ8 جیسے فونز میں الگ سے "پورٹریٹ موڈ” موجود ہے جو لی گئی سیلفی کو ڈیجیٹل انداز میں بہتر بناتا ہے۔ لیکن تصویر لینے کا اصل طریقہ یہ ہے کہ اسے تصویر دور سے لیا جائے۔

تو ڈاکٹرز کہتے ہیں کہ خدا کے لیے اپنی ناک مت کٹوائیے، سیلفی اِسٹک خرید لیں یا بہتر کیمرے والا فون حاصل کریں یا تصویر کسی دوست سے کھنچوائیں اور پھر بھی مطمئن نہ ہوں تو فوٹو شاپ تو موجود ہے ہی ۔

Business Selfie