تیزرفتار انٹرنیٹ کے لیے اینڈروئیڈ پرکلاوڈ فلئیرDNSاستعمال کریں

8,456

کمپیوٹنگ کے قارئین نے کلاؤڈ فلئیر کی 1.1.1.1 ڈی این سروس کے بارے میں مضمون تو پڑھا ہی ہو گا۔ جس میں بتایا گیا تھا کہ تیز رفتار اور محفوظ انٹرنیٹ کے لیے کلاؤڈ فلئیر نے اپنی ڈی این ایس سروس متعارف کروائی ہے جو کہ گوگل سے بھی زیادہ تیز رفتار ہے۔ اس مضمون میں ہم آپ کو بتائیں گے کس طرح آپ اپنے اینڈرائڈ اسمارٹ فون میں اس ڈی این ایس سروس کی سیٹنگز کر کے تیز ترین انٹرنیٹ سرفنگ سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔

سب سے پہلے مختصراً ڈی این ایس سروس کے بارے میں بتاتے چلیں۔ کہ ڈی این ایس دراصل Domain Name System کا مخفف ہے۔ جسے اردو میں ہم "ناموں کے حلقہ اثر کا نظام” بھی کہ سکتے ہیں۔ اس میں ڈی این ایس سرور آپ کے دیے گئے پتے کو اس کے آئی پی ایڈریس میں تبدیل کرتا ہے۔ یہ بالکل ایسے ہی ہے جیسے آپ کسی دوست کو کال کرتے وقت اس کا نام ٹائپ کرتے ہیں لیکن آپ کا فون نام سے متعلقہ نمبر کو ڈھونڈ کر ڈائل کرتا ہے۔

اس نظام کا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ویب سائٹ سے پہلے ڈی این ایس سرور پر جانے کی وجہ سے نا صرف رفتار سست ہوتی ہے بلکہ انٹرنیٹ پرووائیڈر کے پاس وہ تمام ایڈریس جمع ہوتے ہیں جن کو آپ وزٹ کرتے ہیں۔ اس سے بحیثیت انٹرنیٹ صارف آپ کی پرائیویسی بھی متاثر ہوتی ہے۔

کلاؤڈ فلئیر نے انہی مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک ایسی ڈی این ایس سروس متعارف کروائی ہے جس کی سیٹنگ کرنے کے بعد آپ نا صرف تیز رفتار انٹرنیٹ سے مستفید ہو سکتے ہیں بلکہ کلاؤڈ فلئیر کا کہنا ہے کہ صارفین کی سیر کردہ تمام ویب سائٹس کے اعدادوشمار چوبیس گھنٹے میں صاف کر دیے جاتے ہیں۔ یوں آپ کی نجی معلومات بھی پوشیدہ رہتی ہیں۔

اب آتے ہیں اس ڈی این ایس کی اینڈرائڈ اسمارٹ فونز پر سیٹنگز کی طرف۔ یاد رہے کہ یہ ترتیب مختلف ماڈلز کے لیے مختلف ہو سکتی ہے۔ اس مضمون میں ہوواوے میٹ 10 پر سیٹنگز کی گئیں ہیں۔ ہر مرحلے پر اسکرین شاٹس سے بھی دیے گئے ہیں۔

نوٹ: کسی بھی مسئلے کی صورت میں مضمون کے آخر میں دیے گئے نقاط کو ضرور پڑھ لیجیے گا۔

  1. سب سے پہلے آپ اپنے اینڈرائڈ موبائل کی وائی فائی سیٹنگز میں جائیں۔ وہاں جس وائی فائی کنکشن سے آپ کا فون منسلک ہے اس کے نام پر ٹچ کر کے دو سیکنڈز تک کے لیے دبائیں۔ ظاہر ہونے والے مینیو میں سے Modify Network کو ٹچ کریں۔

2. یہاں پر آپ دیکھیں گے کہ سب سے نیچے ایک آپشن Show advance Options کے نام سے ہو گی۔ آپ کو اسے ٹچ کر کے ٹک کرنا ہے۔ اس کے نتیجے میں نیچے مزید آپشنز بھی ظاہر ہو جائیں گی۔ ہو سکتا ہے کہ کچھ اینڈرائڈ فونز میں یہ آپشن Advance settings یا More options وغیرہ کے نام سے ہو۔ لیکن ان سب میں مشترک یہی ہے کہ چیک باکس کو ٹک کرنے سے اضافی آپشنز ظاہر ہو جائیں گی۔

3. ظاہر ہونے والی اضافی سیٹنگز میں IP Settings کے نام سے ڈراپ ڈاؤن باکس ہو گا۔ اس باکس کو ٹچ کرنے پر آپ کے سامنے دو طرح کی تجاویز سامنے آئیں گی۔ ایک DHCP جو کہ پہلے سے منتخب کردہ ہو گی۔ دوسری Static جسے آپ نے اب منتخب کرنا ہے۔ اس کا مطلب یہ کہ DHCP کی صورت میں آپ کے پروائیڈر کو یہ اختیار حاصل ہے کہ وہ اپنی مرضی کے ڈومین نام سرور کو منتخب کرسکتا ہے۔ جبکہ Static کو دبانے سے آپ اپنی مرضی کے سرور کا انتخاب کر سکتے ہیں۔ اس لیے Static کو نیچے دیے گئے اسکرین شاٹ کے مطابق منتخب کریں۔

4. اب آپ دیکھیں گے کہ نیچے مزید نئی آپشنز ظاہر ہوں گی۔ جن میں سے آپ نے DNS 1 اور DNS 2 کو تلاش کرنا ہے۔ عموماً یہ باکسز سب سے نیچے ہوتے ہیں۔ یہاں آپ نیچے دیے اسکرین شاٹ کے مطابق DNS 1 میں پہلے سے درج پتے کو مٹا کر 1.1.1.1 کو تحریر کریں۔ یاد رہے یہی کلاؤڈ فلئیر کے ڈی این ایس کا آئی پی پتہ ہے۔ اس کے بعد آپ DNS 2 باکس میں 1.0.0.1 پتے کو درج کریں۔ دونوں ٹیکسٹ باکسز کو دیے گئے طریقے کے مطابق ہی درج کرنا ہے۔ بصورت دیگر یہ ترتیب کام نہیں کرے گی۔

5. اب اس کے بعد Save پر ٹچ کریں۔ اور واپس ہوم اسکرین پر آ کر تیز رفتار انٹرنیٹ سے لطف اندوز ہوں۔ اگر وقتی طور کوئی فرق محسوس نا ہو تو وائی فائی کنکشن کو ایک بار منقطع کر کے دوبارہ ربط قائم کریں۔ اور کلاؤڈ فلئیر کی ڈی این ایس سروس سے مستفید ہوں۔

اور آخر میں درج ذیل اہم ترین نکات کو ایک بار ضرور پڑھ لیں۔

  • یہ ترکیب صرف وائی فائی سروس پہ ہی کام کرے گی۔ اسے ڈیٹا کنکشن اور 4G LTE وغیرہ پر مت آزمائیں۔
  • ہو سکتا ہے کہ آپ کی وائی فائی سروس اس ترکیب کو سپورٹ نا کرے۔ کیونکہ کچھ انٹرنیٹ پرووائیڈر اس سیٹنگز کو سپورٹ یعنی مدد مہیا نہیں کرتے۔
  • بعض پروائڈرز اور فونز کے لیے کچھ اضافی سیٹنگز کی ضرورت بھی پیش آ سکتی ہے۔ مثلاً آئی پی وغیرہ کو سیٹ کرنا، اس کو متعلقہ سروس کے مطابق ہی دیکھا جا سکتا ہے۔
  • اگر درجہ بالا تراکیب آپ کے فون پر کام نہیں کر رہیں۔ یا کسی انہونی کی صورت میں گھبرائیں مت اوپر دی گئی ترکیب کے مرحلہ نمبر 3 کے مطابق IP Settings میں جا کر Static سے واپس DHCP کو منتخب کر لیں۔ اور وائی فائی کنکشن سے دوبارہ ربط قائم کریں۔ آپ کا کنکشن پہلے کی طرح ہی کام کرنے لگے گا۔

مزید کسی مسئلہ یا تجویز کی صورت میں نیچے کمنٹ باکس میں ضرور بتائیں۔