تاریخ میں پہلی بار روبوٹ کی مدد سے آنکھ کا کامیاب آپریشن

1,724

شعبہ طب میں روبوٹ کا استعمال نیا نہیں ہے۔ غدودوں کی سرجری سے لے کر پتے کی پتھری کے علاج تک روبوٹس کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ لیکن جسم کے حساس حصوں خصوصاً آنکھوں کی سرجری جیسے نازک آپریشنز کے لیے انسانی ہاتھوں پر انحصار زیادہ کیا جاتا ہے۔ تاہم اس ضمن میں اچھی خبر یہ ہے کہ طبی تاریخ میں پہلی بار روبوٹ نے انسانی آنکھ کا کامیاب آپریشن کیا ہے۔

یونیورسٹی آف آکسفورڈ کے تحقیق دانوں کی جانب سے سائنسی جریدے "نیچر بائیو میڈیکل انجینئرنگ” میں شائع ہونے والی تحقیق کے مطابق PRECEYES نامی روبوٹ سرجیکل نظام کی مدد سے 12 مریضوں کی آنکھ کا کامیابی سے آپریشن کیا گیا۔

آپریشن کے دوران مریضوں کی آنکھ کے ریٹینا میں موجود ممبرین کو نکالا جانا مقصود تھا تا کہ ویژن کو بہتر کیا جا سکے۔ اس کے لیے آنکھ کی پُتلی کے ذرا نیچے صرف ایک ملی میٹر قطر کی روبوٹک سوئی کو داخل کیا گیا۔ جس نے پہلے ممبرین کو ریٹینا سے علحیدہ کیا پھر اسے آنکھ سے باہر نکال دیا۔

عام طور دستی طریقہ کار میں سرجن اس عمل کو انجام دینے کے لیے انتہائی باریک آلات اور خوردبین کا سہارا لیتا ہے۔ لیکن اس میں غلطی کا بہت احتمال رہتا ہے۔ ذرا سی لاپرواہی سے انسانی آنکھ ضائع ہو سکتی ہے۔ لیکن روبوٹ کی مدد سے یہ سرجری کامیاب ہونے کے بعد اب یہ امید کی جا سکتی ہے کہ یہ نازک ترین کام انتہائی حساسیت اور درستگی کے ساتھ سر انجام دیا جا سکے گا۔