تاریخ میں پہلی بار اسمارٹ فونز کی فروخت میں ریکارڈ کمی

2,428

اسمارٹ فونز کی صنعت روز اول سے ہی منافع بخش رہی ہے اور دن بدن پھیلتی رہی ہے۔ لیکن حال ہی میں بین الاقوامی ادارے گارٹنر کی جانب سے شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ تاریخ میں پہلی بار اسمارٹ فونز کی فروخت میں کمی آئی ہے۔

عالمی موبائل کانگریس کے انعقاد سے عین پہلے شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق سال 2017 کی آخری سہ ماہی کے دوران 408 ملین اسمارٹ فونز فروخت ہوئے جو کہ اس سے گزشتہ سال کی اسی سہ ماہی کی فروخت سے 5.6 فی صد کم تعداد ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس کمی کی بنیادی وجوہات میں سے ایک "کم قیمت لیکن کم میعار” کے فونز کی بے تحاشہ پیداوار جبکہ صارفین کی جانب سے "مہنگے لیکن دیرپا اور پائیدار” فونز کو ترجیح دینا ہے۔ اس کے علاوہ کمپنیز کی جانب سے آئے روز نت نئے ماڈلز تو پیش کیے جا رہے ہیں لیکن ان کی ٹیکنالوجی میں بنیادی اور بڑی تبدیلیاں نا ہونے کے برابر ہیں۔ جس کی وجہ سے صارفین کی جانب سے نئے فونز میں دلچسپی کے رحجان میں کمی آئی ہے۔