بھارت میں ٹِک ٹوک پر پابندی لگ گئی

1,900

بھارت کی وفاقی حکومت نے گوگل اور ایپل کو پلے سٹور اور ایپ سٹور سے چینی ایپلی کیشن ٹِک ٹوک ہٹانے کے لیے خط لکھا تھا،جس کے بعد گوگل اور ایپل نے پلے سٹور اور ایپ سٹور سے اس ایپلی کیشن کو ہٹا دیا ہے۔
اس سےپہلےبھارت کی ریاست تامل ناڈو کی مدراس ہائیکورٹ نے ٹِک ٹوک پر پابندی لگانے کا احکامات دئیے تھے، ان احکامات پر عمل درآمد کرانے کے لیے وفاقی حکومت نے گوگل اور ایپل کو خط لکھا تھا۔
بھارتی حکومت کا خیال ہے کہ ٹِک ٹوک ملک میں پورنو گرافی کے پھیلاؤ کا باعث بن رہی ہے۔بھارتی حکومت کو یہ بھی ڈر ہے کہ جنسی درندے اس ایپلی کیشن سے بچوں کو نشانہ بنا سکتے ہیں۔
یاد رہے کہ بھارت ٹِک ٹوک کی ایک بڑی مارکیٹ ہے۔ یہاں ایپلی کیشن کو 240 ملین بار ڈاؤن لوڈ کیا جا چکا ہے اور بھارت میں ٹِک ٹوک کے ماہانہ فعال صارفین کی تعداد 120 ملین ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept