ٹوئٹر ڈونلڈ ٹرمپ کو بلاک کیوں نہیں کرتا؟

1,141

ٹوئٹر نے ایک مختصر بلاگ پوسٹ میں وضاحت پیش کی ہے کہ آخر وہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ذاتی اکاؤنٹ کو بلاک کیوں نہیں کرتا، لیکن یہ وضاحت بھی ٹرمپ کا نام لیے بغیر دی گئی ہے، بالکل ویسے ہی جیسے مشرقی خواتین اپنے شوہر کا نام نہیں لیتیں 😉۔

پوسٹ میں کہا گیا ہے کہ "ایک عالمی رہنما کو ٹوئٹر پر بلاک کرنا یا ان کی متنازع ٹوئٹس کو حذف کرنا دراصل عوام سے اہم معلومات کو چھپانا ہوگا جو انہیں ملنی چاہیے اور اس پر بحث ہونی چاہیے۔ یہ قدم اس رہنما کو خاموش نہیں کرے گا، لیکن ان کے الفاظ اور اقدامات کے حوالے سے ضروری مکالمے کو نقصان ضرور پہنچائے گا۔”

ٹرمپ نے جمعرات کو شمالی کوریا کے خلاف نیوکلیئر قدم کی دھمکی دی تھی جس پر یہ بحث چھڑی کہ ٹوئٹر کو صدر کا اکاؤنٹ معطل کردینا چاہیے یا پھر کوئی اور قدم اٹھانا چاہیے۔ اس وقت ٹوئٹر نے کہا تھا کہ اس ٹوئٹ نے ان کی terms of services کی خلاف ورزی نہیں کی۔

چند دن پہلے سان فرانسسکو میں ٹوئٹر کے دفتر کے باہر عوامی مظاہرہ بھی ہوا جس میں ٹرمپ کا اکاؤنٹ معطل کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا۔ لیکن ٹوئٹر کا کہنا ہے کہ ہم رہنماؤں کے ٹوئٹر کو ان کے سیاسی تناظر میں دیکھتے ہیں اور اسی حساب سے فیصلہ کرتے ہیں۔

حقیقت یہ ہے کہ ٹوئٹر چاہے گا کہ ٹرمپ اُن کا پلیٹ فارم استعمال کریں اور متنازع ٹوئٹس ہی کریں کیونکہ اس کے نتیجے میں زیادہ سے زیادہ لوگ ٹوئٹر کا رخ کریں گے۔ یہ عام تاثر ہے، جس پر ٹوئٹر کا کہنا ہے کہ کسی ایک شخص کا اکاؤنٹ ٹوئٹر کی ترقی کا ضامن نہیں، اور نہ ہی وہ ادارے کے فیصلوں پر اثر انداز ہو سکتا ہے۔ "ہم ٹوئٹر کو ایک دیکھنے اور ہر معاملے پر آزادانہ مکالمے کے لیے بہترین مقام بنانا چاہتے ہیں۔ ہمارا ماننا ہے کہ یہ معاشرے کی ترقی میں مدد کا بہترین طریقہ ہے۔”