ٹوئٹر نے دو ماہ میں 70 ملین اکاؤنٹس ختم کردیے

7,626

ٹوئٹر نے ایک کریک ڈاؤن کے دوران گزشتہ دو ماہ میں اپنے پلیٹ فارم پر موجود 70 ملین سے زیادہ اکاؤنٹس معطل کردیے ہیں۔

واشنگٹن پوسٹ کی ایک رپورٹ کے مطابق مئی اور جون میں معطل کیے گئے اکاؤنٹس کی شرح اکتوبر 2017ء کی مہم کے مقابلے میں دوگنی ہے۔

ٹوئٹر کو سالوں سے تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے کہ وہ اپنے بے ہودہ اور بدزبان صارفین کو لگام دینے میں ناکام رہا ہے۔ گزشتہ ماہ ایک بلاگ میں ٹوئٹر نے کہا تھا کہ وہ اپنی پالیسیوں کو بہتر بنانے پر کام کر رہا ہے اور اس کے سسٹمز نے ہر ہفتے 9 اعشاریہ 9 ملین ایسے اکاؤنٹس کا پتہ لگایا جو ممکنہ طور پر اسپیم ہیں اور خودکار طور پر چلتے ہیں۔

ایسے ہی دیگر اقدامات سے سال کی دوسری سہ ماہی میں ٹوئٹر کے صارفین کی تعداد میں کمی آ سکتی ہے البتہ ٹوئٹر کے ایک ایگزیکٹو کا کہنا ہے کہ کئی اکاؤنٹس ایسے ہیں جو شاذ و نادر ہی ٹوئٹ کرتے ہیں اس لیے متحرک صارفین کی تعداد پر کوئی ڈرامائی اثر نہیں پڑے گا۔