ٹوئٹر صارفین کو ایک مرتبہ پھر ویریفائی کرنے لگا، خاموشی سے!

731

ٹوئٹر نے پچھلے سال صارفین کے اکاؤنٹس کی تصدیق یعنی verify کرنے کا عمل روک دیا تھا۔ نیلے رنگ کا یہ نشان کبھی ان صارفین کو دیا جاتا تھا جو معروف ہوتے تھے بلکہ ٹوئٹر کا ویریفائیڈ اکاؤنٹ صارفین میں اسٹیٹس کی علامت (status symbol) بن چکا تھا لیکن گزشتہ کچھ عرصے میں حالات تیزی سے تبدیل ہوئے ہیں۔ بالخصوص امریکا میں ڈونلڈ ٹرمپ کی حکومت آنے کے بعد نسل پرستوں سمیت کئی لوگوں کو زبان مل گئی ہے جنہوں نے ٹوئٹر کی جانب سے ویریفائیڈ اکاؤنٹس کے سلسلے کو پھیلانے کا فائدہ اٹھایا۔ جس کے بعد ٹوئٹر نے اس اعلان کے ساتھ اکاؤنٹس کی تصدیق روک دی کہ وہ ایک بہتر نظام کے لیے کام کرے گا۔

اس اعلان کے بعد ٹوئٹر نے کئی اکاؤنٹس کی verification منسوخ کی، جن میں زیادہ تر سفید فام نسل پرستوں اور سازشی نظریات کے حامل افراد کے تھے۔ گو کہ اس کے بعد ٹوئٹر نے علانیہ طور پر تصدیق کا نیا نظام پیش نہیں کیا لیکن پچھلے چند ہفتوں میں دیکھا گیا ہے کہ مختلف اکاؤنٹس کے افراد verify ہوئے ہیں جیسا کہ مائیکل وولف کا جو ڈونلڈٹرمپ کی نئی کتاب Fire & Fury کے مصنف ہیں۔ ان کے علاوہ کنزیومر فنانشل پولیٹیکل بیورو کے نئے ڈائریکٹر مک ملوینی اور دیگر کے اکاؤنٹس بھی verify ہوئے ہیں۔

اس سے اندازہ ہو رہا ہے کہ ٹوئٹر نے خاموشی سے یہ عمل دوبارہ شروع کردیا ہے۔ سوچ رہے ہیں اس مرتبہ ہم بھی درخواست دے ہی دیں 🙂