اپڈیٹ کے بعد آئی فون ناکارہ ہونے لگے

2,298

ایپل کی جانب سے حال ہی میں اسمارٹ فون آپریٹنگ نظام iOS 11.3 کی اپڈیٹ کے بعد ایپل کے کئی ماڈل ناکارہ ہونے کی خبریں سامنے آ رہی ہیں۔

ایپل نے گزشتہ ماہ مارچ کے اواخر میں اپنے آئی فونز کے لیے آپریٹنگ سسٹم کی اپڈیٹ iOS 11.3 کے نام سے جاری کی تھی۔ اس ورژن سے اپڈیٹ ہوتے ہی آئی فون 8 کے ماڈلز کے ٹچ سسٹم جواب دے گئے۔ خصوصاً ایسے ماڈلز جن کی اسکرین کی مرمت تیسری پارٹی کی کمپنیوں سے کروائی گئی تھی۔

اخبار نیو یارک پوسٹ میں شائع ہونے والی خبر کے مطابق اس اپڈیٹ سے سب سے زیادہ ایسے صارفین متاثر ہو رہے ہیں جنہوں نے اپنے آئی فونز اسکرین کے خراب ہونے پر اسے ایپل کمپنی کی بجائے نسبتاً سستا راستہ اختیار کرتے ہوئے غیر مصدقہ دکانداروں سے مرمت کروایا تھا۔ ایسے فونز اس اپڈیٹ کے بعد مکمل طور پر ناکارہ ہو رہے ہیں۔

واضح رہے کہ 29 مارچ کو اپڈیٹ جاری کرتے وقت ایپل عہدیداران نے دعویٰ کیا تھا کہ اس میں آئی فونز کے بیٹری نقائص پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔ نیز کئی نئے فیچر بھی متعارف کروائے گئے ہیں۔ لیکن ناقدین کا کہنا ہے کہ اس کا ہدف مرمت کردہ آئی فون 8 تھے۔ کیونکہ ایپل کا آئی فون مرمت کرنے کا شعبہ بہت بڑا ہے اور ایپل اس مد میں سالانہ بھاری رقوم وصول کرتا ہے۔ اس لیے کمپنی نہیں چاہتی کہ صارفین اس کے نظامِ مرمت کو چھوڑ کر نجی جگہوں سے مرمت کروائیں۔

رپورٹ کے مطابق آئی فون کی اسکرین کو چلانے کے لیے ایک خصوصی چپ استعمال کی جاتی ہے۔ اور یہی چپ اپڈیٹ کے بعد کام کرنا چھوڑ دیتی ہے۔ کیونکہ یہ مرمتی کے بعد ری ڈیزائن ہو چکی ہوتی ہے۔ اس سے پہلے بھی ایپل کی جاری کردہ اپڈیٹ نے آئی فون 7 کے لیے بہت سے مسائل کھڑے کر دیے تھے جنہیں بعد میں نئی اپڈیٹ سے حل کیا گیا تھا۔

ایپل نے اس بارے میں فی الحال کوئی مؤقف نہیں دیا ہے۔ تاہم یہ طے ہے کہ اگر آپ مرمت کردہ آئی فون 8 استعمال کر رہے ہیں تو آئی او ایس 11.3 اپڈیٹ کے بعد آپ کا فون مکمل طور پر ناکارہ اور ناقابلِ استعمال ہو سکتا ہے۔