واٹس ایپ نے پیغام فارورڈ کرنے پر نئی پابندی لگا دی

10,249

افواہوں اور جعلی خبروں کی روک تھام کے لیے واٹس ایپ نے سخت اقدامات اٹھانے شروع کردیئے ہیں۔ حال ہی میں پاکستان اور بھارت کے تمام بڑے اخباروں میں واٹس ایپ نے انگلش اور مقامی زبانوں میں اشتہار کے ذریعے صارفین کو جعلی خبروں اور افواہوں سے بچنے کے لیے ترغیب اور مشورے دیئے گئے تھے۔

افواہوں کے پھیلاؤ کو قابو کرنے کے لیے واٹس ایپ نے ایک اور اہم قدم اٹھایا ہے۔ اب واٹس ایپ صارفین موصول ہونے والے پیغام کو محدود لوگوں کو ہی فارورڈ کرسکیں گے۔

یہ پابندی دنیا بھر کے واٹس ایپ صارفین پر لاگو کی جارہی ہے جبکہ بھارت میں یہ پابندی زیادہ سخت کی گئی ہے۔ دنیا بھر کے واٹس ایپ صارفین ایک وقت میں کوئی پیغام صرف 20 لوگوں کو فارورڈ کرسکیں گے جبکہ بھارت میں صارفین صرف 5 لوگوں کو ہی کوئی پیغام فارورڈ کرپائیں گے۔ اس کے ساتھ ہی پیغام کے ساتھ نظر آنے والے فارورڈ کا شارٹ کٹ بٹن بھی ختم کیا جارہا ہے۔

واٹس ایپ پر بچوں کے اغواہ کی ایک جعلی ویڈیو کی وجہ سے بھارت میں اب تک 30 افراد اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں ۔ جس کے بعد بھارتی حکومت نے واٹس ایپ سے رابطہ کرکے اسے اپنے پلیٹ فارم کو جعلی خبروں اور افواہوں سے پاک کرنے کامطالبہ کیا تھا۔ اس مطالبے کے بعد واٹس ایپ نے مبینہ جعلی خبروں اور افواہوں پر مبنی پیغامات کے ساتھ ایک نوٹ بھی لگانا شروع کردیا جو صارفین کو بتاتا ہے کہ موصول ہونے والے پیغام مشکوک ہے۔