وائرلیس چارجنگ مہنگی پڑے گی

873

آئی فون X اور 8 میں وائرلیس چارجنگ کی خوبی گویا ایک خواب کی تعبیر ہے، لیکن یاد رکھیں اس کی ایک قیمت بھی ہے، جو بھاری بھی ہو سکتی ہے۔

زیڈڈی نیٹ کے لکھاری ایڈرین کنگسلی-ہیوز نے نشاندہی کی ہے کہ وائرلیس طریقے سے چارج کی گئی بیٹری عام چارج شدہ بیٹری سے کہیں زیادہ تیزی سے ختم ہوتی ہے۔ دراصل وائرلیس چارجنگ بیٹری کو نقصان پہنچاتی ہے یہاں تک کہ ایک موقع ایسا آتا ہے کہ وہ پہلے کی طرح چارج کرنے کے قابل بھی نہیں رہتی۔

ایپل کا دعویٰ ہے کہ آئی فون کی بیٹری "500 مرتبہ مکمل چارج کیے جانے پر بھی اپنی 80 فیصد طاقت برقرار رکھتی ہے” کنگسلی-ہیوز کہتے ہیں کہ یہ 500 چارج ڈیڑھ سال میں مکمل ہو جاتے ہیں۔ جبکہ باقی فونز میں دو سے تین سال کے استعمال کے بعد بھی بیٹری میں 80 فیصد دم باقی ہوتا ہے۔ ابھی چھ ماہ ہوئے ہیں اور ابھی سے یہ 135 چارجنگ چکر مکمل کر چکا ہے۔

انہوں نے چارجنگ میں فون کے رویّے کا مشاہدہ کیا اور پایا کہ چھ ماہ قبل وائرلیس چارجنگ کا انتخاب کرنے کے بعد ان کے فون کی چارجنگ خطرناک شرح سے کم ہو رہی ہے۔ اب عالم یہ ہے کہ بیٹری کو چارجنگ میں سخت مسائل کا سامنا ہے۔

وائرلیس چارجنگ مقبول ہوتی جا رہی ہے اور بہت سارے نئے فونز میں یہ صلاحیت موجود ہے، اس لیے یہ جاننا ضروری ہے کہ اس سہولت کی ایک قیمت ہے، جو آپ کو اور آپ کے فون کو ادا کرنا پڑے گی۔