وہ ملک جہاں ہر تیسرا شخص کرپٹو کرنسی رکھتا ہے

1,822

جنوبی کوریا بٹ کوائن کے لیے دنیا کی بڑی مارکیٹوں میں سے ایک ہے۔ ایک حالیہ تحقیق کے مطابق ملک میں تنخواہ دار طبقے سے تعلق رکھنے والے ہر 10 افراد میں سے تین نے کرپٹو کرنسی میں سرمایہ کاری کر رکھی ہے۔ کرپٹو کرنسی میں سرمایہ کاری کرنے والے افراد میں سے 80 فیصد سے زیادہ نے اس سے کمایا ہے جبکہ 20 فیصد ایسے بھی ہیں جنہیں اپنی سرمایہ کاری پر اوسطاً 425 فیصد منافع ملا ہے یعنی ‘پانچوں انگلیاں گھی میں اور سر کڑاہی میں۔’

کوریا میں کرپٹوکرنسی کا کاروبار کتنے عروج پر ہے اس سے اندازہ لگا لیں کہ اوسط کوریائی سرمایہ کار نے ان ورچوئل کرنسیوں میں 5.66 ملین وون (5260 ڈالرز) لگا رکھے ہیں۔

یہ معلومات 19 سے 20 دسمبر کے درمیان بذریعہ ای میل 941 افراد سے کیے گئے ایک پول کے ذریعے حاصل کی گئی ہیں، جن میں سے 80 فیصد نوجوان ہیں جن کی عمریں 20 اور 30 کے پیٹے میں ہیں۔

جنوبی کوریا جاپان اور امریکا کے بعد بٹ کوائن میں دنیا کی تیسری بڑی مارکیٹ ہے۔ ایک اندازے کے مطابق اس کے 20لاکھ ڈجیٹل کرنسی سرمایہ کار ہیں، یعنی ہر 25 شہریوں میں سے ایک کرپٹو کرنسی رکھتا ہے۔ یہ ملک دنیا کے سب سے بڑے کرنسی ایکسچینجز میں سے ایک Bithumb کا بھی مسکن ہے۔ اس کے مقابلے میں صرف 11 فیصد امریکی ایسے ہیں جنہوں نے ورچوئل کرنسی میں سرمایہ کاری کر رکھی ہے یا ماضی میں کی تھی۔ جبکہ 17.2 فیصد کا کہنا ہے کہ وہ مستقبل میں بٹ کوائن میں سرمایہ لگائیں گے۔

کرپٹوکرنسی میں سرمایہ کاری کرنے والے اگر آپ نے بھی دیکھے ہوں تو اندازہ لگا لیا ہوگا کہ یہ ہر وقت بدلتی ہوئی قیمتوں پر نظر رکھتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ انہیں جنوبی کوریا میں "بٹ کوائن زومبی” کہا جاتا ہے۔

جنوبی کوریا کے وزیر اعظم لی ناک ییون نے عوام کی بٹ کوائن دیوانگی پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور خبردار کیا ہے کہ اس کا نتیجہ سخت بگاڑ اور معاشی مسائل کی صورت میں نکل سکتا ہے بلکہ نوجوان منشیات کے کاروبار جیسی غیر قانونی سرگرمیوں میں بھی پڑ سکتے ہیں۔

کرپٹوکرنسی کے حوالے سے تشویش بڑھتے ہی جنوبی کوریا کی حکومت نے رواں ماہ کچھ اقدامات اٹھائے ہیں جیسا کہ کرپٹو کرنسی کے لین دین پر ٹیکس لاگو کیا ہے اور کم عمر افراد کے سرمائے لگانے پر پابندی عائد کی ہے ۔ ساتھ ہی غیر ملکی افراد کو کرپٹو کرنسی ایکسچینجز میں ٹریڈنگ اکاؤنٹ کھولنے سے روک دیا ہے۔ ویسے اب حکومت نے اعلان بھی کیا ہے کہ وہ کرپٹو کرنسی ٹریڈنگ پر نئی پابندیاں بھی لگانے والا ہے جس میں بے نام اکاؤنٹس پر پابندی لگانا شامل ہوگا۔