بٹ کوائن ڈیجیٹل کرنسی

11,781

بٹ کوائن

ہیش(Hash)

کمپیوٹنگ میں ہیشنگ کا عمل باکثرت ہوتا ہے۔ ہیش فنکشن کو کسی بھی سائز کا ڈیٹا فراہم کیا جائے تو یہ اسے پیچیدہ ریاضی عمل سے گزار کر ہمیشہ ایک ہی سائز (fixed size) کے اسٹرنگ میں بدل دیتا ہے۔ ایک ہی جیسی ان پٹ پر ہیش فنکشن ہمیشہ ایک ہی جیسی آئوٹ پٹ ویلیو ریٹرن کرے گا۔ لیکن ان پٹ کے طور پر دیئے گئے ڈیٹا میں انتہائی معمولی تبدیلی آئوٹ پٹ ویلیو کو مکمل طور پر تبدیل کردیتی ہے۔ آئوٹ پٹ ویلیو جسے کرپٹوگرافک ہیش ویلیو کہا جاتا ہے، کے ذریعے یہ معلوم کرنا ناممکن ہے کہ ان پٹ میں کیا ڈیٹا دیا گیا تھا۔

فرض کیجئے کہ ایک عدد 561204 ہے جسے دو اعداد کو ضرب دے کر حاصل کیا گیا ہے۔ کیا آپ وہ دو نمبر بتا سکتے ہیں؟ یہ یقینا بہت مشکل ہے۔ لیکن اگر آپ کو بتایا جائے کہ یہ نمبرز 62356 اور 9 ہیں تو آپ بہ آسانی دونوں کو ضرب دے کر نتیجہ حاصل کرسکتے ہیں۔ ہیشنگ کا عمل بھی کچھ ایسا ہی ہے لیکن اس سے بہت زیادہ پیچیدہ اور مشکل۔

بلاک

بٹ کوائن نیٹ ورک پر ہونے والی ہر ٹرانزیکشن ایک رجسٹر میں ریکارڈ ہوتی ہے۔ یہ ٹرانزیکشن ہمیشہ کے لئے نیٹ ورک پر محفوظ رہتی ہے اور اسے کبھی بھی اور کوئی بھی دیکھ سکتا ہے۔ ٹرانزیکشنز کا یہ مجموعہ بلاکس میں محفوظ ہوتا ہے۔ ہر بلاک میں ان تمام تازہ ترین ٹرانزیکشنز کا ریکارڈ ہوتا ہے جنھیں اب تک کسی دوسرے بلاک کا حصہ نہیں بنایا گیا۔ ہر بلاک میں ٹرانزیکشن ریکارڈ کے ساتھ اپنے سے پچھلے بلاک کے بارے میں بھی معلومات محفوظ ہوتی ہے۔