میموری کارڈ یا یو ایس بی فلیش ڈرائیو سے شارٹ کٹس بنانے والا وائرس ڈیلیٹ کریں

577

آج کل کمپیوٹرز سے زیادہ فونز میں موجود میموری کارڈز وائرسز کا شکار ہیں۔ اس کی بنیادی وجہ کسی وائرس زدہ کمپیوٹر سے فون کو کنیکٹ کرنا ہے۔ وائرس جو پہلے ہی کمپیوٹر پر موجود ہوتا ہے وہ فوراً میموری کارڈ کو بھی انفیکٹڈ کر دیتا ہے۔
میموری کارڈ میں وائرس داخل ہوتے ہی یہ سب سے پہلے اس میں موجود تمام فولڈرز کو پوشیدہ یعنی hidden کر دیتا ہے اور فولڈرز کے شارٹ کٹس بنا دیتا ہے جو بنیادی طور پر وائرس کی اپنی فائلز ہوتی ہیں۔ یہ وائرس آج کل بہت عام ہے۔ Show-Hidden-Files
میموری کارڈ کو اس وائرس سے صاف کرنا بہت آسان ہے۔ میموری کارڈ کو کارڈ ریڈر کی مدد سے کسی ایسے پی سی سے کنیکٹ کریں جس میں اپ ڈیٹڈ اینٹی وائرس انسٹال ہو۔ اس وائرس کی تصدیق کے لیے پہلے hidden فائلز شو کر کے دیکھ لیں۔ فائلز شو ہوتے ہی آپ دیکھیں گے کہ اصل فولڈرز موجود ہیں جب کہ دکھائی دینے والے تمام فولڈرز اصل فولڈرز کے شارٹ کٹس کی صورت میں موجود ہیں۔
اب اس کارڈ کو اینٹی وائرس سے مکمل اسکین کریں۔ اینٹی وائرس اس میں موجود تمام شارٹ کٹس کو ڈیلیٹ کر دے گا۔
اب چونکہ میموری کارڈ کے اصل فولڈرز پوشیدہ ہیں تو انھیں سامنے لانے کے لیے کمانڈ پرامپٹ میں یہ کمانڈ استعمال کریں:
attrib -h -r -s /s /d f:\*.*
F کی جگہ میموری کارڈ کا ڈرائیو لیٹر ٹائپ کریں۔ یہ کمانڈ ٹائپ کرنے کے بعد انٹر پریس کر دیں۔ تمام پوشیدہ فولڈرز واپس اصلی حالت میں آجائیں گے۔
یہ کام کرنے کے لیے آپ ایک .bat فائل بھی بنا سکتے ہیں۔ اس کام کے لیے نوٹ پیڈ میں درج ذیل کوڈ ٹائپ کریں:
@echo off
attrib -h -r -s /s /d f:\*.*

commandیاد رکھیں کہ f کی جگہ میموری کارڈ، یو ایس بی فلیش ڈرائیو یا جس ڈرائیو کی پوشیدہ فائلز شو کرنی ہے اس کا ڈرائیو لیٹر ٹائپ کرنا ہے۔ یہ کوڈ لکھنے کے بعد نوٹ پیڈ کی فائل کو showfiles.bat یا جس نام سے چاہیں محفوظ کر لیں۔ یاد رہے کہ ایکسٹینشن .txt نہیں بلکہ .bat ہونا چاہیے۔ یہ فائل بنا لینے کے بعد اس پر ڈبل کلک کر کے اسے چلائیں، مسئلہ حل ہو جائے گا۔
اب میموری کارڈ میں اچھی طرح جائزہ لیں، کوئی فالتو فائلز نظر آئیں تو انھیں ڈیلیٹ کر دیں خاص کر کوئی ایگزی (.exe یا آٹو رن فائلز۔لیجیے آپ کا میموری کارڈ بالکل صاف ہو چکا ہے۔
یہ طریقہ یو ایس بی فلیش ڈرائیو کے لیے بھی کارگر ہے۔ اس صورت حال سے بچنے کے لیے ہمیشہ وائرس سے صاف کمپیوٹر کے ساتھ ہی میموری کارڈ کو کنیکٹ کریں۔ اس کے علاوہ اسمارٹ فون پر کوئی نہ کوئی اینٹی وائرس پروگرام ضرور انسٹال رکھیں۔

(آپ کے اسمارٹ فون کے لیے ٹاپ ٹین سیکیورٹی ٹولز)

(یہ تحریر کمپیوٹنگ شمارہ ستمبر 2013 میں شائع ہوئی)